پشاور: بس ریپڈ ٹرانزٹ منصوبہ کے جنگلے چوری ہونے لگے

پشاور (پبلک نیوز) بس ریپڈ ٹرانزٹ منصوبہ تاخیر کا شکار تو ہے ہی لیکن اسے چوری کا بھی سامنا ہے۔ بسوں کے روٹ پر لگائے جانے والے جنگلے چوری ہونے لگے ہیں۔ مختلف مقامات سے جنگلے توڑ کرسریا نکال لیا گیااوریہ سلسلہ گذشتہ کئی ماہ سے جاری ہے۔

تفصیلات کے مطابق بس ریپڈٹرانزٹ منصوبہ کے لیے 20 بسیں کراچی سے پشاور پہنچا دی گئیں۔ بسیں سردار گڑھی کے قریب بی آر ٹی کے مرکزی اڈے میں کھڑی کی گئی ہیں۔

گزشتہ ہفتے بسیں چین سے کراچی پہنچی اور گزشتہ روز پشاور۔ صوبائی حکومت کہنا ہے کہ منصوبہ میں مزید تاخیر کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی۔ اسی لیے منصوبہ کی سافٹ اوپننگ کے لیے 23مارچ کی تاریخ دی گئی ہے۔

دوسری جانب سامنے آیا ہے کہ منصوبہ پر کام تو تیزی سے جاری ہے لیکن چوری کا سلسلہ بھی رک نہیں رہا۔ بسوں کے روٹ پر لگائے جانے والے جنگلے چوری ہونے لگے ہیں۔ مختلف مقامات سے جنگلے توڑ کر سریا نکال لیا گیا۔ یہ سلسلہ گزشتہ کئی ماہ سے جاری ہے۔

چوری کے اس عمل نے منصوبہ کی ناقص سکیورٹی کا پول کھول دیا۔ ٹھیکہ دار کو ہوش ہے نہ ہی حکومت زیر تکمیل پراجیکٹ کی حفاظت کر سکی ہے۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں