کراچی: حلقہ این اے243، پی ایس 111 میں فوج، رینجرز تعینات ہونگی

کراچی (پبلک نیوز) شہر قائد کے دو حلقوں میں ضمنی الیکشن کے سلسلے میں تمام ترتیاریاں مکمل کرلی گئیں۔ این اے 243 اور پی ایس 87 پر انتخابی دنگل کے سلسلے میں سیاسی جماعتوں کی بھرپو انتخابی مہم جاری ہے۔ ضمنی الیکشن میں فوج اور رینجرز کو بھی تعینات کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے دو حلقوں پر ضمنی الیکشن ہونے جا ریا ہے۔ ضابطہ اخلاق جاری کر دیا گیا۔ قومی اسمبلی کے حلقے این اے243 اور صوبائی حلقہ پی ایس 111 پر فوج اور رینجرزتعینات ہوگی۔

این اے 243 پر رجسٹرڈ ووٹوں کی تعداد چارلاکھ اٹھارہ ہزار ہے۔ الیکشن میں اکیس امیدوار مدمقابل ہیں مگراصل مقابلہ ہے تحریک انصاف کے عالمگیر محسود، پیپلزپارٹی کے حکیم جسکانی اورایم کیو ایم کے عامر چشتی کے درمیان ہو گا۔ این اے 243 میں دو سو سولہ پولنگ اسٹشین قائم ہوں گے جبکہ حلقے کے 92 پولنگ اسٹیشن کو انتہائی حساس قراد دیا گیا ہے۔ ضمنی الیکشن کا دنگل گلشن اقبال، گلستان جوہر، میٹروول، بہادرآباد، کے ڈی اے اسکیم ون ،شانتی نگر، ضیا الحق کالونی اور دیگرعلاقوں میں لگے گا۔

صوبائی اسمبلی کا حلقے پی ایس 87 پرتحریک لبیک کے امیدوارکے انتقال کے باعث الیکشن ملتوی ہوا۔ گڈاپ، پپری، گلشن حدیداسٹیل ٹاون، عبداللہ گوٹھ اور دیگرعلاقوں پر مشتمل اس حلقے میں رجسٹرڈ ووٹوں کی تعداد ایک لاکھ چھیالیس ہزارسے زائد ہے اور یہاں بھی اصل مقابلہ پیپلزپارٹی اور تحریک انصاف کے درمیان ہوگا۔

حارث افضل  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں