کابینہ ارکان اور سرکاری افسر ہیلی کاپٹر کا استعمال کرسکیں گے: وزیر اطلاعات کے پی

پشاور (پبلک نیوز) خیبرپختونخوا میں ضم شدہ اضلاع کے لیے 10 سالہ ترقیاتی منصوبے کی منظوری دے دی گئی۔ مراعات ایکٹ میں ترمیم کے بعد کابینہ ارکان اور سرکاری افسر ہیلی کاپٹر کا استعمال کرسکیں گے۔

 

تفصیلات کے مطابق خیبرپختونخوا کابینہ کا اجلاس ہوا۔ اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے وزیراطلاعات شوکت یوسفزئی کا کہنا تھا کہ اجلاس میں اہم فیصلے کیے گئے۔ یہ سب سے طویل اجلاس تھا۔

 

ترقیاتی منصوبوں کے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا میں ضم شدہ اضلاع کے لیے 10 سالہ ترقیاتی منصوبے کی منظوری دی گئی۔ قبائلی اضلاع کی ترقی کے لیے ایک ماہ میں کنسیپٹ پیپر تیار کرلیا جائے گا۔ 10.18 ارب، وفاق کے 54، پنجاب کے 38 ارب روپے بنتے ہیں۔ خیبرپختونخوا نے قبائلی اضلاع کے لیے 3 فیصد حصہ میں سے اپنا حصہ دینے کی منظوری دیدی۔

 

کابینہ مراعات ایکٹ کے بارے میں بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ کابینہ نے وزراء مراعات ایکٹ میں ترمیم کی منظوری دیدی۔ کابینہ ارکان اور سرکاری افسر ہیلی کاپٹر کا استعمال کرسکیں گے۔ ماس ٹرانزٹ ریل منصوبہ کے مقعلق ان کا کہنا تھا کہ ماس ٹرانزٹ ریل منصوبہ چین کے تعاون سے شروع ہوگا۔ صوابی، مردان، چارسدہ، نوشہرہ کو ٹرین کے ذریعے پشاور سے ملایا جائے گا۔

 

شوکت یوسفزئی کا کہنا تھا کہ ملاکنڈ ڈویژن میں معاون قاضیوں کی منظوری دیدی ہے۔ قرآن و سنت کی روشنی میں معاون قاضی فیصلے کریں گے۔ ممبر لیبر اپیلٹ ٹریبونل کے 2 ججوں کی منظوری دیدی گئی مائنز سیفٹی کا عالمی معیار فالو کیا جائے گا۔ کان کنوں کے معاوضوں اور ان کی حفاظت کا طریق کار طے کر لیا گیا ہے۔ جان بحق کان کنوں کے لواحقین کو پانچ لاکھ امدادی پیکج کی منظوری دی گئی ہے۔ بجری، ریت، پتھر اور دیگر چھوٹی معدنیات نکالنے کے لہے قانون بنایا ہے۔ نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ ایکٹ میں ترمیم کرلی گئی ہے، قدرتی آفات ڈکلئیر کرنے کا اختیار محکمہ ریلیف کو دے دیا گیا ہے۔ ریلیف کے کاموں کے لیے نان اے ڈی پی سکیم بنائی گئی ہے۔

 

صوبائی وزیر اطلاعات نے آگاہ کیا کہ ٹوبیکو ڈویلپمنٹ سیس میں صوابی یونیورسٹی کا حصہ 50 فیصد سے کم کرکے 10 فیصد کردیا گیا ہے۔ محکمہ صحت کے 197 ملازمین سمیت 250 کے لگ بھگ ملازمین کو ریگولرائزڈ کردیا گیا ہے۔ بچوں کے بھاری بیگز پر وزیراعلی نے تشویش کا اظہار کیا۔ محکمہ تعلیم کو سختی سے ہدایات جاری کردی گئی ہیں۔ کوئی بھی نجی سکول چھٹیوں کے دوران بچوں کی فیس وصول نہیں کرے گا۔ جماعت چہارم سے ختم نبوت کے مضمون میں تحریف کے معاملے پر برہمی کا اظہار کیا گیا۔

حارث افضل  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں