جمال خاشقجی کے قتل میں سعودی ولی عہد براہ راست ملوث ہیں: ڈائریکٹر سی آئی اے

پبلک نیوز: امریکی خفیہ ایجنسی کی سربراہ کی سینیٹ میں سعودی صحافی کے قتل سے متعلق بریفنگ کے بعد سینیٹرز کا کہنا تھا کہ کہ انہیں یقین ہوگیا کہ جمال خاشقجی کے قتل میں سعودی ولی عہد براہ راست ملوث ہیں۔

سی آئی اے کی ڈائریکٹر جینا ہسپیل نے امریکی سینٹرزکو سعودی صحافی کے قتل سے متعلق بریف کیا۔ جس کے بعد سینیٹرز نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ انہیں یقین ہو گیا کہ صحافی جمال خاشقجی کے قتل میں سعودی ولی عہد محمد بن سلمان براہ راست ملوث ہیں۔

سینیٹ کی خارجہ کمیٹی کے چیئرمین باب کورکر کا کہنا ہےکہ انہیں یقین ہے کہ اگر سعودی ولی عہد کا ٹرائل کیا جائے تو جیوری انہیں صرف 30 منٹ میں مجرم ثابت کر دے گی۔

 سینیٹر لنڈسے گراہم نے کہا کہ ایسی کوئی وجہ ہی نہیں ہے کہ جمال خاشقجی کے قتل میں سعودی ولی عہد ملوث نہیں تھے۔ وہ سینیٹ میں ولی عہد کو خاشقجی کے قتل کا ذمہ دار قراردینے کی قرارداد پیش کریں گے۔

جنوبی کیرولینا سے تعلق رکھنے والے رپبلکن سینیٹر نے سعودی شاہوں کے بارے میں کہا کہ وہ ایک پاگل پن اور خطرناک کھیل کھیل رہے ہیں۔ سینیٹرز نے سعودی عرب سے تمام معاہدے ختم کرنے کا بھی مطالبہ کیا۔

حارث افضل  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں