بھارتی پارلیمان میں 33 فیصد ارکان جرائم پیشہ ہیں: رپورٹ

پبلک نیوز: بھارتی پارلیمان جرائم پیشہ افراد کا گڑھ بننے لگا۔ رپورٹ کے مطابق پارلیمنٹ میں تینتیس فیصدارکان کےخلاف مجرمانہ نوعیت کے مقدمات ہیں۔ مجرمانہ ریکارڈ رکھنے والوں میں مودی کی جماعت بی جے پی کے ارکان کی تعداد زیادہ ہے۔

بھارت میں قانون توڑنے والے ہی قانون سازہیں۔ پارلیمنٹ چوروں اورڈاکوؤں کا گڑھ بن گیا۔ بھارتی انتخابی اصلاحات کے لیے کام کرنے والی تنظیم ایسوسی ایشن فار ڈیموکریٹک رائٹس نے ہوش ربا رپورٹ جاری کر دی۔

رپورٹ کے مطابق پارلیمان میں 33 فیصد ارکان جرائم پیشہ ہیں۔ پارلیمان میں آنے والےارکان میں جرائم اور جرائم پیشہ افراد کی تعداد میں مسلسل اضافہ ہوتا جا رہا ہے۔

رپورٹ کے مطابق 521 اراکین میں سے 174 ارکان کے خلاف فوجداری مقدمات درج ہیں۔ جن میں قتل، اقدام قتل، فرقہ ورانہ منافرت کو ہوا دینے، اغوا اور خواتین پر تشدد جیسے سنگین جرائم کے مقدمات درج ہیں۔

مجرمانہ سرگرمیوں میں زیادہ تر ارکان کاتعلق حکمران جماعت بی جے پی سے ہے۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں