مینار پاکستان: قرار داد پاکستان کی یاد

مینار پاکستان ٹھیک اس جگہ موجود ہے جہاں 78 سال پہلے قرار داد پاکستان منظور ہوئی۔ مینار پاکستان اپنی منفرد فن تعمیر کا عکاس ہے۔

مینار پاکستان جس جگہ موجود ہے جسے منٹو پارک کہا جاتا تھا اور اب گریٹر اقبال پارک کہلایا جا تا ہے۔ ترک ماہراین تعمیرات نے اس کی تعمیر1960 میں شروع کی۔ جس پر 75 لاکھ لاگت آئی، 324سیٹرھیوں والے اس خو بصورت مینار کی بلندی 196فٹ اور 6انچ ہے۔

مینار پاکستان کا زیریں حصہ پھول کی پتیوں کی مانند ہے جبکہ اسکی دیوراں پر کندہ کی گئی۔ جہدو جہد آزادی... مزید پڑھیں
حارث افضل  1 سال پہلے

نگرانی کو آئے اور ڈیرے جما لیے

یہ مثال صادق ہوتی ہے نگران وفاقی حکومت پر۔ الیکشن کروانے کی آئینی ذمہ داری پوری کرنے کے بعد حکومت کی اولین ترجیح انتقال اقتدار ہونا چاہیے تھی لیکن بوجوہ یہ حکومتی ترجیحات میں کہیں بھی نظر نہیں آئی۔
اسمبلی اجلاس بلانے کے لیے جان بوجھ کر تاخیر کی گئی۔ اس تاخیر کی بنیادی وجہ اور مقصد نگران وزیر اعظم کی جانب سے یوم آزادی کی تقریب میں مہمان خصوصی بننے کی خواہش تھی۔ اس خواہش کی تکمیل میں الیکشن کمیشن نے بھی نگران حکومت کا خوب ساتھ دیا۔

ممبران کی کامیابی کا نوٹیفکیشن جا... مزید پڑھیں
احمد علی کیف  1 سال پہلے

آوے کا آوا ہی بگڑا ہو ا ہے!

محمد اکبر باجوہ

شریف خاندان کے سربراہ نواز شریف پر کرپشن ثابت ہوچکی اور جیل کی ہوا کھا رہے ہیں۔ مریم نواز والد کی جائیداد چھپانے کے جرم میں سلاخوں کے پیچھے ہیں۔ کیپٹن (ر) صفدر ارتکابِ جرم میں معاونت پر قید ہیں۔ خاندان کے باقی اہم افراد پر کرپشن کے سنگین الزامات ہیں۔ شریف خاندان کی کرپشن کی روداد سنا اور دکھا رہے ہیں ۔

آوے کا آوا ہی بگڑا ہوا ہے۔ یہ محاورہ شریف خاندان پر صادق آتا ہے۔ کوئی کرپشن ثابت ہونے پر سزابھگت رہا ہے تو کسی کے خلاف کرپشن کی... مزید پڑھیں
احمد علی کیف  1 سال پہلے

جشن آزادی پر پاکستانیوں کے دل کی دھڑکن قومی ترانہ کی عظمت

لاہور (پبلک نیوز) قومی ترانہ کسی ملک اور قوم کی اساس و نظریات کی پہلی علامت ہوتا ہے۔ قومی ترانے کا ایک ایک لفظ وطن کی حرمت اور ازادی کا ترجمان سمجھاجاتا ہے۔ جش ازادی پر زندہ قومیں اپنا قومی ترانہ گنگنانا اعزاز سمجھتی ہیں۔

 

قیام پاکستان کے بعد پہلا قومی ترانہ قائد اعظم کے حکم پر پاکستانی ہندو جگن ناتھ نے لکھا، جو چھ سال تک ھندو کا لکھا قومی ترانہ، اے سر زمین پاک، زرے تیرے ہیں کہکشاں آج ستاروں سے تابناک، یہ ترانہ سرکاری تقریبات کے موقع پر پڑھا جاتا رہا تھا... مزید پڑھیں
عطاء سبحانی  1 سال پہلے

  13جولائی 23 کشمیریوں کی شہادت، تحریک آزادی کشمیر کی بنیاد کا اہم دن

(پبلک نیوز) جنت نظیر وادی کشمیر لہو لہو ہے۔ ہزاروں کشمیری حق خود ارادیت کے حصول کے لئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر چکے ہیں۔ 13 جولائی 1931 کو 23 کشمیری سپوتوں نے جانوں کی قربانی دے کر تحریک آزادی کشمیر کی بنیاد ڈالی۔ اسی مناسبت سے آج دنیا بھر میں کشمیری یوم شہدائے کشمیر منا رہے ہیں۔

تقسیم ہند سے پہلے معصوم کشمیری ڈوگرہ راج کی غلامی کا طوق... مزید پڑھیں
عطاء سبحانی  1 سال پہلے