35 سال سے اقتدار میں رہنے والوں کا احتساب پہلے ہو گا: چیئرمین نیب

 

اسلام آباد (پبلک نیوز):  چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے کہا  کہ 35  سال سے اقتدار میں رہنے والوں کا احتساب پہلے ہو گا۔ 100 ارب ڈالر کا زیادہ تر قرض اللے تللے پر خرچ ہوا۔ اربوں کی منی لانڈرنگ کے مکمل شواہد ہیں۔

 

شہراقتدار میں تقریب سے خطاب  کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا  کہ چند ماہ کی حکومت کو بھی جواب دینا ہو گا۔ نیب سیاسی انتقام پر یقین نہیں رکھتا، ہمارا کام صرف کرپشن کا خاتمہ ہے۔ چند لوگوں کو اکٹھا کر کے وی کا نشان بنانے سے کوئی معصوم نہیں ہو جاتا۔

 

چیئرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے کہا کہ نیب سیاسی انتقام پر یقین نہیں رکھتا۔ نیب کا سیاست سے کیا کام؟؟ ہمارا کام صرف اور صرف ملک سے کرپشن کا خاتمہ ہے۔ پروڈکشن آرڈر پر باہر آنیوالے کہتے ہیں سیاسی انتقام لیا جا رہا ہے۔

 

 

چیئرمین نیب کا مزید کہنا تھا کہ ایک طبقہ 35 سے 40 سال اقتدار میں رہا اور ایک کچھ ماہ اقتدار میں رہا۔ 35 سال اقتدار میں رہنے والوں کا پہلے حساب ضروری ہے۔ اربوں کی منی لانڈرنگ کے مکمل شواہد ہیں۔



جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے کہا 100 ارب ڈالر کا زیادہ تر قرض اللے تللے پر خرچ ہوا، اسپتالوں اور درسگاہوں کی حالت دیکھیں، جو برداشت کر سکتے وہ تو زکام کا علاج کرانے بھی باہر چلے جاتے ہیں۔



انھوں نے کہا نیب کا کام سزا دینا نہیں، شہادتیں عدالتوں کے سامنے رکھنا ہے، سزا دینا عدالتوں کا کام ہے۔ جو کرے گا وہ بھرے گا یہ نیب کی بنیادی پالیسی ہے۔

 



احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں