ہم کرپشن فری پاکستان کے لیے پر عزم ہیں: چئیرمین نیب

 

پبلک نیوز: چئیرمین نیب جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال نے کہا ہے کہ تحقیقاتی اداروں پر مشتعمل مشترکہ تحقیقاتی ٹیمیں بنانے کا آغاز کیا ہے۔ 50 ہزار کتابوں پر مشتعمل ای لائبریری بھی بنائی گئی ہے۔ نیب شفافیت پر یقین رکھتا ہے۔ پاکستان کا سارک ممالک میں انسداد بدعنوانی فورم کا چئیرمین بننا ایک اعزاز کی بات ہے۔

 

چئیرمین نیب کی زیر صدارت نیب ہیڈ کواٹر میں اجلاس ہوا۔ جس میں ان کا کہنا تھا کہ میگا کرپشن کیسز ایک چیلنج ہیں۔ میگا کرپشن کیسز کو منطقی انجام تک پہنچانے کے لیے دگنی کوشش کر رہے ہیں۔ ہم کرپشن فری پاکستان کے لیے پر عزم ہیں۔

 

جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کا کہنا تھا کہ مقدمات کی پیروی کے لیے تجربہ کار پراسیکیوٹرز کی خدمات حاصل کی گئی ہیں۔ نیب نے تحقیقاتی اداروں پر مشتعمل مشترکہ تحقیقاتی ٹیمیں بنانے کا آغاز کیا۔ مشترکہ ٹیموں کا مقصد سینئر افسران کے تجربات سے فائدہ اٹھانا ہے۔ نیب ہیڈ کوارٹر میں 50 ہزار کتابوں پر مشتعمل ای لائبریری بھی بنائی گئی ہے۔ ای لائبریری میں ماہانہ اور سالانہ شائع ہونے والی قانونی رپورٹس بھی شامل ہیں۔

 

ان کا کہنا تھا کہ ای لائبریری مستقبل میں پراسیکیوٹرز کے لیے فائدہ مند ثابت ہو گی۔ نیب کے تمام محکموں کی بہتر کارکردگی کے لیے  اقدامات کئے ہیںچ۔ سارک ممالک میں پاکستان کو کرپشن کے خاتمے کے حوالے سے رول ماڈل بانا چاہتے ہیں۔  کرپشن کے خاتمے کے اقدامات سے پاکستان کا درجہ 175 سے 116 پر آ گیا ہے۔ پاکستان کا سارک ممالک میں انسداد بدعنوانی فورم کا چئیرمین بننا ایک اعزاز کی بات ہے۔

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں