شریف فیملی کیخلاف زیر التواء نیب انکوائریز 3ماہ میں مکمل کرنے کی ہدایت

لاہور(ادریس شیخ) نواز شریف اور شہباز شریف کے خلاف 18سال سے زیر التواء نیب انکوائریز 3 ماہ میں مکمل کی جائیں، چیئرمین نیب کی ہدایت، شریف برادران پر من پسندافراد کو غیر قانونی طور پر پلاٹ نواز نے کا الزام ہے۔

 

سابق وزیراعظم نواز شریف اور سابق وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے خلاف 18 سال سے تیرہ انکوائریز تکمیل کی منتظر ہیں، شہباز شریف کے خلاف ایک اور نواز شریف پر 12 پلاٹ غیر قانونی طور پر نوازنے کا الزام ہے۔ 10جون 2000ء کو شہباز شریف کے خلاف نواں کوٹ میں میاں عطاء اللہ کو 12 پلاٹ الاٹ کرنے کا الزام ہے، نیب کے مطابق میاں عطاء اللہ کو ایک پلاٹ کے بدلے 12پلاٹ دیے گئے۔

 

نواز شریف کے خلاف سال 2000 سے خواجہ رضوان محمود ، محمدخان، قمرزمان ، سائرہ کوکب، مظہررسول، طاہر یوسف، رشید احمد خان، محمد سرور، علی عارف، فاطمہ افضال، انعام خان، قریش خان کو غیرقانونی طور پر پلاٹ دینے کا الزام ہے، چیئرمین نیب نے شریف برادران کے خلاف پلاٹوں کی الاٹمنٹ سے متعلق 13 انکوائریز مکمل کرنے کی ہدایت کی ہے۔

عطاء سبحانی  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں