پی ٹی آئی حکومت نااہلوں کا ٹولہ، ملک نہیں سنبھالا جا رہا: بلاول بھٹو

پبلک نیوز: چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ کوئٹہ دھماکے میں انسانی جانوں کے ضیاع پرافسوس ہے۔ افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ ملک کاوزیرداخلہ وزیراعظم ہے۔ افسوسناک واقعہ ہونے کے باوجود وزیراعظم کوئٹہ نہیں پہنچے۔ ملک میں12،12گھنٹے کی لوڈ شیڈنگ کی جارہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہرماہ بجلی کی قیمتوں میں اضافہ کیاجارہاہے۔ شدید گرمی کے باوجود آپ لوگ جلسہ میں آئے۔ پاکستان میں لوڈ شیڈنگ کا عذاب بڑھتا جارہا ہے۔ مزدوربدحالی کی زندگی گزار رہے ہیں۔ مہنگائی آسمان کوچھورہی ہے۔ بیروزگاری کی انتہاہے۔ یہ نااہلوں کاٹولہ،ان سے ملک نہیں سنبھالا جا رہا۔

انھوں نے کہا کہ غریب کوگھردینے کے بجائے ان کے گھر چھینے جارہے ہیں۔ اپنی آف شور کمپنی اورعلیمہ خانم کی لندن میں جائیدادوں کاحساب دو۔ یہ سندھ کی عوام پر قبضہ کرنا چاہتے ہیں۔ حکومت 18ویں ترمیم ختم کر کے صوبوں کا حق مارنا چاہتی ہے۔ یہ ون یونٹ بناکرملک کوتوڑناچاہتے ہیں۔ یہ بھٹو شہید کے دیئے آئین کو ختم کرنا چاہتے ہیں۔

بلاول کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی نے جمہوریت کی خاطرجانیں قربان کی ہیں۔ ایسی حکومت نہیں دیکھی جو 3،3باربجٹ پیش کرتی ہے۔ صوبے مضبوط ہوں گے تو ملک مضبوط ہوگا۔ وزیراعظم گھوٹکی میں آکرکہتے ہی18ویں ترمیم سے ملک دیوالیہ ہوگیا۔

ان کا یہ بھی کہناتھا کہ وزیراعظم نے آئی ایم ایف کے پاس نہ جانے کا دعویٰ کیا تھا۔ ڈالر کی قیمتیں آسمان سے باتیں کر رہی ہیں۔ جوڈالر100روپے کا تھاآج144روپے کا مل رہا ہے۔ حکومت غربت نہیں غریبوں کوختم کررہی ہے۔ یہ حکومت نہ صرف دھوکے باز اورجھوٹی بلکہ منافق ہے۔

پارٹی چیئرمین نے کہا کہ عوام ان منافقوں سے بچ کر رہیں۔ آج کے کٹھ پتلی ہرجگہ بھیگ مانگنے چلے جاتے ہیں۔ 18ویں ترمیم کوختم کرنے کی کوشش کی گئی تو دما دم مست قلندر ہوگا۔ کٹھ پتلی نے کہا تھا کالادھن سفید کرنے کے لیے ایمنسٹی اسکیم لاتے ہیں۔ وزیرخزانہ آج آئی ایم ایف کے پاؤں میں بیٹھے ہیں۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں