قومی کھلاڑی لڑکیوں سے ہی سبق سیکھ لیں: احسان مانی

اسلام آباد (فیصل ساہی) چیئرمین پی سی احسان مانی نے بھی قومی ٹیم کی کارکردگی پر مایوسی کا اظہار کر دیا۔ ان کا کہنا ہے کہ قومی کھلاڑی لڑکیوں سے ہی کچھ سیکھ لیں، انہوں نے پی ایس ایل کے آدھے میچ پاکستان میں کروانے کی خواہش کا بھی اظہارکردیا۔

 

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو میں چئیرمین پاکستان کرکٹ بورڈ احسان مانی نے کہا کہ قومی ٹیم کی کارکردگی سے مایوسی ہوئی۔ سیریز کے اختتام کے بعد پر فارمنس کا جائزہ لیں گے۔ جنوبی افریقہ کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں کارکردگی مایوس کن تھی۔ چئیرمین پی سی بی نے کہا کہ انٹرنیشنل کرکٹ کی بحالی کے لیے ہر ملک سے بات کر رہے ہیں۔ اے بی ڈیویلیئرز سمیت دیگر غیر ملکی کرکٹرز پاکستان آنے کو تیار ہیں۔

 

احسان مانی کا کہنا تھا کہ کسی ملک میں حکومت کے پیسوں سے کھیلیں نہیں چل سکتیں۔ پی سی بی کی طرح دیگر سپورٹس فیڈریشنز کو خود فنڈز پیدا کرنا ہوں گے۔ حکومت جو فنڈز دیتی ہے اس کا احتساب بھی ضروری ہے، پی ایس ایل بہت اچھا ٹورنامنٹ ہے تین سالوں میں پی ایس ایل کامیاں رہا۔ انہوں نے کہا کہ چاہتا ہوں اگلے دو سالوں میں پی ایس ایل کے تمام میچز پاپستان میں ہوں۔ پی ایس ایل کے اگلے سیزن کے آدھے میچز پالستان میں منعقد کروانا چاہتے ہیں۔

 

ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان میں لڑکیوں کا کرکٹ کھیلنا بہت ضروری ہے۔ خواتین کرکٹ میں نیا ٹیلنٹ سامنے نہیں آ رہا۔ ٹاسک رپورٹ بنا کر حکومت کو پہنچا دی گئی ہے۔ پاکستان میں سپورٹس اسٹرکچر، ڈویلپمنٹ اور احتساب ہونا چاہیے انہوں نے کہا کہ ملک میں سپورٹس کلچرل پروان چڑھانا ضروری ہے۔

حارث افضل  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں