فواد چودھری کے ایوان بالا میں داخلے پر پابندی کے حقائق کیا ہیں؟

چئیرمین سینیٹ صادق سنجرانی نے وزیرِ اطلاعات فواد چودھری کی جانب سے معافی مانگنے تک  ایوانِ بالا میں آمد پر پابندی عائد کر دی تھی ۔ آخر یہ معاملہ ہے کیا؟ کیا واقعی یہ سب کابینہ میٹنگ میں زیرِ غور آیا.

اس حوالےسے تحریک انصاف کے حلقوں میں چھڑ گئی۔ فواد چودھری نے پریس کانفرنس میں کابینہ میٹنگ کا حوالہ دیتے ہوئے وزیرِ اعظم بارے کہا  تھا کہ وزیرِ اعظم نے چئیرمین سینیٹ کے رویے پر متبادل حکمتِ عملی بنانے پر غور کرنے کا عندیہ دیا ہے۔ مگر حکومت تو حکومت خود پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما رضا ربانی نے یہ تسلیم کرنے سے انکار کیا۔

وزیرِ مملکت برائے پارلیمانی امور علی محمد خان نے بھی سینیٹ کو بتایا کہ کابینہ میں ایسی کوئی بات نہیں ہوئی۔ وفاقی وزیرِ خزانہ اسد عمر نے بھی دو ٹوک الفاظ میں کہ  دیا کہ کابینہ میں ایسی کوئی بات  نہیں ہوئی۔ تاہم مصدقہ ذرائع کا کہنا ہے کہ فواد چودھری اپنے مؤقف کی نفی کیے جانے پر شدید نالاں ہیں۔

جواباً علی محمد خان کا کہنا ہے کہ انہوں نے وہی بیان کیا جو سچ تھا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایسی بات ہوئی ہو گی مگر کابینہ اجلاس  میں نہیں۔ دوسری طرف وزیرِ اعظم نے چئیرمین سینیٹ سے گفتگو میں کہا کہ حکومتی وزراء کے خلاف یک طرفہ ایکشن نہ لیا جائے۔ مشاہد اللہ سمیت اپوزیشن رہنماؤں پر بھی نا مناسب الفاظ کے استعمال پر یکساں کارروائی کی جائے۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں