سپریم کورٹ نے تہرے قتل کے ملزم کی ضمانت منظور کر لی

لاہور (ادریس شیخ) سپریم کورٹ نے تہرے قتل کے ملزم کی ضمانت منظور کر لی۔ چیف جسٹس پاکستان آصف سعید کھوسہ نے دوران سماعت ریمارکس دیئے کہ فیصلہ سے ایک روز پہلے بھی عدالت درست سمجھے تو ملزم کی ضمانت لے سکتی ہے۔

سپریم کورٹ لاہورجسٹری میں چیف جسٹس پاکستان آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے تہرے قتل کیس کی سماعت کی۔ ملزم سجاد قمر کے وکیل نے عدالت کوبتایا کہ دبئی میں ملازمت کے دوران پاکستان میں تہرے قتل کا مقدمہ درج کیا گیا، تمام ثبوت عدالت کو دیئے گئے لیکن میرے موکل کو پاکستان واپس آنے پر گرفتار کر لیا گیا۔

مدعی وکیل نے عدالت میں دلائل دیئے کہ گواہان کی شہادتیں ریکارڈ ہو چکی ہیں، ضمانت منظور نہ کی جائے۔ جسٹس آصف سعید خان کھوسہ نے ریمارکس دیئے کہ ہمارا مسئلہ ہے ہم قانون نہیں پڑھتے، قانون کےمطابق فیصلے سے ایک روز قبل بھی عدالت درست سمجھے تو ملزم کی ضمانت لے سکتی ہے۔ چیف جسٹس نے واضح کیا کہ کسی بے گناہ کو ایک دن بھی جیل میں نہیں رہنا چاہیے۔

عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد تہرے قتل کے الزام میں گرفتار ملزم کی ضمانت منظور کر لی۔

احمد علی کیف  5 ماه پہلے

متعلقہ خبریں