تھرپارکر میں بچوں کی اموات سے متعلق کیس،چیف سیکریٹری نے رپورٹ پیش کر دی

کراچی(پبلک نیوز) سپریم کورٹ رجسٹری میں تھرپارکر میں بچوں کی اموات کا معاملہ، تھرپارکر کی مختلف ترقیاتی اسکیموں کو متعلقہ محکموں کے حوالے کر دیا گیا ہے۔ چیف سیکریٹری نے رپورٹ پیش کر دی۔ 

 

کراچی سپریم کورٹ رجسٹری میں تھرپارکر میں بچوں کی اموات کا معاملہ، تھرپارکر کی مختلف ترقیاتی اسکیموں کو متعلقہ محکموں کے حوالے کر دیا گیا، چیف سیکریٹری نے رپورٹ پیش کر دی۔ وسیم احمد چیئرمین پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ نے کہا کہ  سندھ حکومت نے اسپیشل انیشیٹیو ڈپارٹمنٹ بنایا تھا، اس محکمے کے پاس آر او پلانٹس اور پمپنگ اسٹیشنز کی مختلف اسکیمیں تھیں۔

 

چیف سیکریٹری سندھ ممتاز علی شاہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تھر میں ہم صحت اور دیگر معامالات کے حوالے سے عدالت کو آگاہ کر دیا ہے۔ خوراک کی تقسیم کا سلسلہ جاری ہے۔ صحت کے حوالے سے بچوں کے اسپتال کی بات ہوئی ہے، صورتحال کا جائزہ لینے کے لئے چیف جسٹس صاحب بھی دورہ کریں گے۔

 

چیف جسٹس نے دوران سماعت ریمارکس دئیے کہ دیگر محکموں کے ہوتے ہوئے اس محکمہ کی کیا ضرورت تھی؟ آپ نے 105 ارب روپے کا بجٹ بھی اس محکمے کو دے دیا۔ عدالت نے اسپیشل انیشیٹیو ڈپارٹمنٹ پر خرچ کیے گئے بجٹ کے آڈٹ کا حکم دے دیا۔ تین ہفتے میں فرانسک آڈٹ کرکے رپورٹ پیش کی جائے۔

عطاء سبحانی  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں