چین امریکا تجارتی جنگ میں شدت، چینی مصنوعات پر مزید اربوں ڈالر کے ٹیکس عائد

 

پبلک نیوز: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ چینی اپنی کرنسی کی قدر میں کمی کرتے ہیں اور زیادہ منافع کما کر رقم لے جاتے ہیں۔ چین اپنی مصنوعات امریکا میں فروخت کر کے فائدہ اٹھاتے ہیں۔ نئی محصولات کا نفاذ چین کی تمام درآمدات پر 1 ستمبر سے ہو گا۔

 

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر کی جانب سے چین کی مزید 3 کھرب ڈالر مالیت کی مصنوعات پر 10 فیصد ٹیکس عائد کرنے کا اعلان  کر دیا گیا ہے۔ نئی محصولات کا نفاذ چین کی تمام درآمدات پر 1 ستمبر سے ہو گا۔ چین کی جانب سے کہنا تھا کہ یہ اقدام تجارتی جنگ کو مزید ہوا دینے کے مترادف ہے۔

                                                    

ڈونلڈ ٹرمپ کا ایک بیان میں کہنا تھا کہ چینی اپنی کرنسی کی قدر میں کمی کرتے ہیں اور زیادہ منافع کما کر رقم لے جاتے ہیں۔ چین اپنی مصنوعات امریکا میں فروخت کر کے فائدہ اٹھاتے ہیں۔

 

واضح رہے کہ اس سے پہلے صدر ٹرمپ نے اپنے ٹوئیٹ میں کہا تھا کہ بیجنگ کسی منصفانہ معاہدے پر آمادہ نہیں ہونا چاہتا۔ امریکی ٹیم چین سے مذاکرات کر رہی ہے لیکن وہ ہمیشہ اپنے فوائد حاصل کرنے کے لیے آخر میں ڈیل کو تبدیل کر دیتے ہیں۔ چین امریکی زرعی مصنوعات خریدنے میں دلچسپی نہیں رکھتا۔ گزشتہ 27 برس کے دوران چین کا رویہ انتہائی خراب رہا۔

احمد علی کیف  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں