دفتر سے بیزار ہو کر ایک شخص نے 14 ہزار ڈالرز کی بارش کردی

 

پبلک نیوز: چین میں ایک شخص نے دفتر سے بیزار ہو کر سڑک پر 14 ہزار ڈالرز اڑا دیے جو کہ کافی لوگوں نے بٹور لیے لیکن بعد میں اس شخص کو جب اپنی غلطی کا احساس ہوا تو اس نے وہی پیسے لوگوں سے واپس مانگنا شروع کر دیے۔

 

تفصیلات کے مطابق چین کے صوبے فوجیان کے شہر شی شی میں 42 سالہ ہوانگ نامی شہری نے 14 ہزار سے زائد ڈالرز بینک سے نکالے تھے جسے اس نے سڑک پر ٹریفک جام ہونے کے سبب غصے میں اڑا دیے اور اردگرد موجود تمام لوگوں نے فوراً سمیٹ لیے۔ ہوانگ کے دفتر ساتھیوں کا کہنا تھا کہ اس کا یہ دن آفس میں بہت خراب گزرا تھا جس کی وجہ سے وہ کافی چڑچڑا رہتا تھا۔

 

 

ہوانگ کو جب اپنی غلطی کا احساس ہوا تو اس نے پچھتاتے ہوئے پولیس سے مطالبہ کیا کہ اسے پیسے واپس دلائے جائیں۔ حکام کی جانب سے ہوانگ کے اس عمل پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہنا تھا کہ یہ مناسب رویہ نہیں ہے جو آدمی کے لیے مشکل کا باعث بن گیا تھا اور اب وہ عوام سے پیسے مانگ رہا ہے۔

 

مزے کی بات تو یہ ہے کہ ہوانگ کی اپیل پر کافی لوگوں نے پولیس سے رابطہ کر کے اس کے پیسے لوٹا دیے۔

 

احمد علی کیف  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں