فیسوں میں کمی کا حکم صرف چند نہیں بلکہ پورے ملک کے اسکولوں کیلئے ہے:چیف جسٹس

اسلام آباد(امجد بھٹی) سپریم کورٹ میں بحریہ ٹاون کیس کی سماعت کے دوران سکولوں کی فیسوں میں کمی سے متعلق چیف جسٹس کے اہم ریمارکس، عدالت نے صرف بیس سکولوں کی فیسوں میں کمی کا حکم نہیں دیا تھا، فیسوں میں کمی کے فیصلے کا اطلاق تمام سکولوں پر ہوتا ہے۔

 

سپریم کورٹ میں بحریہ ٹاون کیس کی سماعت ہوئی، سماعت کے دوران سکولوں کے حوالے سے چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار نے ریمارکس دیتے ہوئے واضح کیا ہے کہ فیسوں میں کمی کا حکم صرف چند اسکولوں کے لیے نہیں بلکہ پورے ملک کے لیے ہے، یہ حکم صرف 22 یا 27 اسکولوں لیے نہیں دیا گیا تھا۔چیف جس چسٹس نے کہا کہ ہم نے فیسوں میں کمی کا کہنا تھا کہ سکولز انتظامیہ نے اسکول بند کرنے شروع کر دیئے، اگر کسی کو ابہام ہے تو ہمیں فائل دیں، پڑھ کے سب کو بتا دیتے ہیں۔

متعلقہ خبر:سپریم کورٹ نے 21 پرائیویٹ سکولز کو 20 فیصد فیسوں میں کمی کرنے کا حکم دے دیا

واضع رہے کہ گذشتہ ماہ سپریم کورٹ نے 13 دسمبر کو 5 ہزار روپے سے زائد فیس لینے والے تمام نجی اسکولوں کو فیس میں 20 فیصد کمی کرنے کے ساتھ ساتھ 2 ماہ کی چھٹیوں کی فیس کا 50 فیصد حصہ والدین کو واپس کرنے کا حکم بھی دیا تھا۔ عدالت جانب سے ایف بی آر کو نجی اسکولز مالکان اور ڈائریکٹرز کے انکم ٹیکس گوشواروں کی چھان بین کا بھی حکم دیے رکھا تھا۔

عطاء سبحانی  5 ماه پہلے

متعلقہ خبریں