مالی دشواریوں کے باوجود عوام پر کوئی بوجھ نہیں ڈالنا چاہتے: وزیراعلیٰ پنجاب

لاہور(پبلک نیوز) وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی صوبائی کابینہ کا اجلاس، پنجاب کابینہ کے اجلاس میں 40 نکاتی ایجنڈے کی منظوری دی گئی۔ پنجاب کابینہ نے آبیانہ کے نرخ میں اضافے کی تجویز کو مسترد کر دیا۔

 

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کی زیرصدارت صوبائی کابینہ کا اجلاس ہوا، اجلاس میں پولیس آرڈر کے تحت پنجاب میں ضلع کی سطح پر تنازعات کے حل کیلئے مصالحتی کمیٹیاں بنانے کا فیصلہ۔ مصالحتی کمیٹیوں کے قیام سے تنازعات کو عوامی سطح پر حل کرنے میں مدد ملے گی۔ تنازعات کے متبادل حل (آلٹرنیٹیوڈسپیوٹ ریزولوشن ) کے بل 2019ء کی منظوری۔ سیف سٹی پراجیکٹ کا دائرہ کار پنجاب کے بڑے شہروں تک بڑھانے کا فیصلہ کیا گیا۔ اس ضمن میں کیس ٹو کیس جائزہ لے کر ترجیحات کے مطابق سیف سٹی پراجیکٹ شروع کیا جائے گا۔

 

صوبائی کابینہ کے اجلاس میں پرائم منسٹر نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کے تحت چشتیاں، لودھراں اور رینالہ خورد میں کم لاگت کے گھروں کی تعمیر کے منصوبے کی منظوری۔ کابینہ کی منظوری کے بعد محکمہ ہاؤسنگ اس منصوبے پر عملدرآمد کی ذمہ داری نبھائے گا۔ انسٹی ٹیوٹ آف پبلک ہیلتھ لاہور کو انتظامی اور مالیاتی خودمختاری دینے کا فیصلہ، انسٹی ٹیوٹ آف پبلک ہیلتھ کے امور کے بارے میں انتظامی کمیٹی تشکیل دینے کی منظوری دی گئی۔

 

اجلاس میں فورٹ منرو ڈویلپمنٹ اتھارٹی کا نام تبدیل کرکے کوہ سلیمان ڈویلپمنٹ اتھارٹی ڈیرہ غازی خان رکھنے کی منظوری دی گئی۔ کوہ سلیمان اتھارٹی کا دائرہ کار تحصیل کوہ سلیمان قبائل علاقے تک بڑھانے کا فیصلہ، ڈیرہ غازی خان کے قبائلی علاقے ساکڑ میں بارڈر ملٹری پولیس کی نئی پوسٹ کے قیام کی منظوری۔ صوبائی وزیر توانائی کو کابینہ کمیٹی برائے توانائی کا چیئرمین بنانے اور ایڈیشنل چیف سیکرٹری توانائی کو کابینہ کمیٹی برائے توانائی کا ممبر بنانے کی منظوری دی۔


حکومتی اداروں اور کمیونٹی کو خود مختار بنا کر چائلڈ لیبر کا سد باب ‘‘کے پراجیکٹ کیلئے این ایف سی سینٹرز اور سرگرمیوں کے آغاز کیلئے ایم او یو مسودے کی منظوری۔ لاہور ایسٹرن بائی پاس پراجیکٹ کی تعمیر کیلئے وزارت مواصلات (این ایچ اے) کو اراضی منتقل کرنے کی منظوری دی گئی۔ دی پاکستان کڈنی اینڈلیور انسٹی ٹیوٹ اینڈریسرچ سینٹر ایکٹ 2019 ء کی منظوری۔ ٹریفک مینجمنٹ ریفارمز کے تحت پراونشل موٹر وہیکلز (ترمیمی )بل 2018ء کی منظوری دی گئی۔


پنجاب ریڈ زونز (اسٹیبلشمنٹ اینڈ سیکورٹی ) بل 2018ء کے بل کی منظوری دی گئی۔ یونیورٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی کالاشاہ کاکو کیمپس میں اے سی ٹیسٹنگ لیبارٹری کے قیام کیلئے حکومت پنجاب اور یو ای ٹی لاہور کے درمیان معاہدے کے مسودے کی منظوری۔ پنجاب زکوۃ اینڈ عشرایکٹ 2018ء میں ترامیم کے مسودہ قانون کی منظوری۔ پنجاب اینیمل ہیلتھ ایکٹ 2018ء کے مسودے کی منظوری۔ پنجاب لٹریسی اینڈ نان فارمل ایجوکیشن پالیسی 2018ء کے مسودے کی منظوری ہوئی۔

 

صوبائی کابینہ اجلاس میں جنرل ایجوکیشن اور ویمن یونیورسٹیز کے وائس چانسلرز کی پوسٹ کیلئے قابلیت، تجربہ اور اہلیت سے متعلق امور، سرچ کمیٹی کی تشکیل کے طریقہ کار اور سرچ کمیٹی کیلئے مخصوص لائحہ عمل کی منظوری دی گئی۔ سپیشلائزڈ یونیورسٹیوں کے وائس چانسلر کی آسامی کیلئے قابلیت، تجربہ اور اہلیت سے متعلق دیگر امور، سرچ کمیٹی کی تشکیل اور طریقہ کار کے لائحہ عمل کی منظوری دی گئی۔720 میگاواٹ کے کاروٹ ہائیڈرو پاور پراجیکٹ سے متعلق امور کی منظوری ہوئی۔

 

اجلاس میں سپریم کورٹ کے احکامات کی روشنی میں محکمہ زراعت کے واٹرمینجمنٹ ونگ کے سپر وائزر (بی ایس 11)کی محکمہ سی اینڈ ڈبلیو ڈیپارٹمنٹ میں سب انجینئر (بی ایس 11)کے طور پر انضمام کی منظوری۔ پنجاب منیمم ویجز ایکٹ 2018ء کے ڈرافٹ بل کی منظوری۔ پراونشل ایمپلائز سوشل سیکورٹی آرڈیننس 1965ء میں مجوزہ ترامیم کی منظوری۔ محکمہ انسانی حقوق و اقلیتی امور حکومت پنجاب اور کرسچین کیئر فاؤنڈیشن لاہور کے درمیان مفاہمت کی یادداشت کی منظوری دی گئی۔

 

وزیراعلیٰ پنجاب کی زیرصدارت اجلاس میں پارکس اینڈ ہارٹیکلچر اتھارٹی لاہور کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے اراکین کی نامزدگی کی منظوری۔ پارکس اینڈ ہارٹیکلچر اتھارٹی ملتان کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے ارکان کی نامزدگی کی منظوری دی گئی۔ پارکس اینڈ ہارٹیکلچر اتھارٹی سرگودھا کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے ارکان کی نامزدگی کی منظوری دی گئی۔ پارکس اینڈ ہارٹیکلچر اتھارٹی گوجرانوالہ کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کے ارکان کی نامزدگی کی بھی منظوری دی گئی۔

 

ڈویلپمنٹ آف سٹیز ایکٹ 1976ء کے تحت ایم ڈی اے ملتان کی گورننگ باڈی کے ارکان کی نامزدگی کی منظوری دی گئی۔ ڈویلپمنٹ آف سٹیز ایکٹ 1976ء کے تحت ڈویلپمنٹ اتھارٹی سرگودھا کی گورننگ باڈی کے ارکان کی نامزدگی کی منظوری دی گئی۔ ڈویلپمنٹ آف سٹیز ایکٹ 1976ء کے تحت ایف ڈی اے فیصل آباد کی گورننگ باڈی کے لئے وائس چیئرمین اور عوامی نمائندوں کو ممبر زنامزد کرنے کی منظوری۔

 

پنجاب کابینہ کے اجلاس میں ڈویلپمنٹ آف سٹیز ایکٹ 1976ء کے تحت بی ڈی اے بہاولپور کی گورننگ باڈی کے ارکان کی نامزدگی کی منظوری دی گئی۔ ڈویلپمنٹ آف سٹیز ایکٹ 1976ء کے تحت آر ڈی اے راولپنڈی کی گورننگ باڈی کے ارکان کی نامزدگی کی منظوری۔ پٹرولیم (ایکسپلوریشن اینڈ پروڈکشن) پالیسی 2012ء میں ترمیم کی منظوری۔ پٹرولیم پالیسی 2018 ء کے تحت صوبائی حکومت کے ٹیکنیکل اور مینجمنٹ سٹاف کو تربیت دینے سے متعلق امور کی منظوری دی گئی۔

 

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا کاشتکاروں کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ کاشتکاروں کے مفادات کا ہر قیمت پر تحفظ کیا جائے گا۔ کاشتکار کے حقوق پر آنچ نہیں آنے دیں گے۔ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کاشتکاروں کے حقوق کی حقیقی نگہبان ہے۔ پنجاب کی ترقی ہمارا نصب العین ہے، ہر فیصلے میں عوام کا مفاد پیش نظر ہے۔ مالی دشواریوں کے باوجود عوام پر کوئی بوجھ نہیں ڈالنا چاہتے۔

 

وزیراعلیٰ پنجاب نے نئے وزیر باؤ محمد رضوان کو کابینہ کے اجلاس میں شرکت پر مبارکباد دی۔ پنجاب کابینہ کا نئے صوبائی وزیر باؤ محمد رضوان کیلئے نیک خواہشات کا اظہار، پہلی بار شرکت پر خیر مقدم بھی کیا۔ انہوں نے کہا کہ عبدالعلیم خان کی عوامی و سیاسی خدمات قابل تحسین ہیں۔ عبدالعلیم خان کی سینئر وزیر کی حیثیت سے کارکردگی شاندار رہی۔

 

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کا کہنا تھا کہ عبدالعلیم خان نے اعلیٰ اخلاقی اقدار کا مظاہرہ کرتے ہوئے وزارت سے استعفیٰ دیا۔ امید ہے عبدالعلیم خان کو انصاف ملے گا۔ تحریک انصاف کی حکومت قانون کی بالادستی پر یقین رکھتی ہے۔ صوبائی کابینہ کے گزشتہ اجلاس کے فیصلوں کی تو ثیق کی گئی۔ صوبائی وزراء، مشیران، معاونین خصوصی، چیف سیکریٹری اور اعلیٰ حکام نےاجلاس میں شرکت کی۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں