سیاسی مخالفت نے عام آدمی سے پینے کے پانی کی سہولت چھین لی

لاہور(ادریس شیخ) شہباز شریف کے دور حکومت میں چوہدری شجاعت حسین اور پرویز الہی کے وٹرز واٹر سپلائی اور ڈرینیج سے محروم رہے۔ سرکاری افسران نے من پسند ٹھیکیدار کو ٹھیکہ سونپ دیا کروڑوں روپے کا غیر قانونی فائدہ دیا۔


ڈنگہ گجرات میں پانی کی فراہمی کی اولین سکیم پر بھی کرپشن کے الزامات عائد ہو گئے، منصوبے کی رپورٹ کے مطابق ٹھیکے کیلئے 21کمپنیز نے درخواستیں دیں، شرائط و ضوابط پر پورا اترنے والی 6فرمز کو ہی غیر قانونی طور پر نااہل قرار دے دیا گیا، محکمہ پبلک ہیلتھ انجنیئرنگ نے من پسند ٹھیکیدار کو غیر قانونی طور پر نوازتے ہوئے ٹھیکہ تفویض کیا۔

سرکاری افسران نے من پسند ٹھیکیدار کو ٹھیکہ سونپ دیا کروڑوں روپے کا غیر قانونی فائدہ بھی دیا، گجرات کے عوام فراہمی آب کی اولین سکیم کی تکمیل کو ہی ترستے رہے، 4 ٹربائن پمپ کی 44لاکھ سے زائد رقم کی ادائیگی کر دی گئی مگر پمپ چھو منتر ہو گئے۔

 

محکمہ پبلک ہیلتھ انجنیئرنگ کے افسران نے ایف بی آر کے رولز کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ٹھیکیدار سے ٹیکس منہا ہی نہ کیا، نااہل چہیتے ٹھیکیدار نے سرکاری خزانے سے وصولی نئے سامان کی کی مگر لگایا سالہا سال پرانا، غلط اعداد و شمار پیش کرکے زائد ادائیگیاں کی گئیں، سیاسی مخالفت، رقابت اور کرپشن کا خمیازہ بے چارہ عوام بھگتتے رہے

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں