شیخ رشید کیخلاف توہین عدالت کیس، حکم عدولی پر راولپنڈی انتظامیہ کی سرزنش

اسلام آباد(پبلک نیوز) سپریم کورٹ میں وزیر ریلوے شیخ رشید کے خلاف توہین عدالت کی درخواست پر سماعت، راولپنڈی انتظامیہ کی سرزنش، جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دیئے کسی کو خوش کرنے کے لئے عدالتی حکم عدولی کی گئی، کمرہ عدالت میں شہباز شریف کے وکیل کی طبعیت بگڑ گئی، بینچ نمبر دو کے تمام کیسز ملتوی کر دیئے گئے۔

 

جسٹس عظمت سعید کی سربراہی میں بینچ نے وزیر ریلوے شیخ رشید کے خلاف توہین عدالت درخواست پر سماعت کی۔ راولپنڈی کے کمشنر اور ڈپٹی کمشنر عدالت میں پیش ہوئے۔ عدالتی حکم عدولی پر جسٹس عظمت سعید نے ڈپٹی کمشنر راولپنڈی کی سخت سرزنش کی اور کہا کہ کیوں نہ انہیں توہین عدالت کا نوٹس دیا جائے؟ جس پر ڈپٹی کمشنر نے عدالت کو بتایا کہ ان کے نزدیک تو کوئی توہین عدالت نہیں ہوئی، جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ دیوار گرا دی گئی، کیا یہ توہین عدالت نہیں؟ ڈپٹی کمشنر کا مؤقف تھا کہ انہوں نے دیوار گرانے کا حکم نہیں دیا۔

 

جسٹس اعجازلاحسن نے ریمارکس دیئے کہ اسسٹنٹ کمشنر موقع پر موجود تھا جھوٹ کیوں بولتے ہیں، گرلز گائیڈز کی وکیل عائشہ حامد نے بتایا کہ ڈپٹی کمشنر جھوٹ کے مرتکب ہورہے ہیں۔ جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ کیا آسیب نے آکر دیوار گرا دی، ڈپٹی کمشنر اس ذمہ داری کے اہل نہیں، وہ کوئی اور کام کریں، ڈپٹی کمشنرنے موقف اپنایا کہ وقوعہ کے وقت وہ لاہور میں تھے جس پر جسٹس اعجازالاحسن کا کہنا تھا کہ لاہور مریخ پر تو نہیں، ڈپٹی کمشنر نے عدالت سے غیر مشروط معافی مانگی تو جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ عدالت کوئی معافی قبول نہیں کرے گی۔

 

وکیل عائشہ حامد نے بتایا کہ پندرہ اپریل کو شیخ رشید کی کال پر دیوار گرائی گئی، جس پر پنجاب حکومت کے وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ ایک رات میں دیوار دوبارہ بنا دی گئی ہے، گیس کنکشن کا کام بھی آج کرا دیں گے، پنجاب حکومت نے عدالت سے رحم کی استدعا کی جس پر جسٹس اعجازالاحسن نے ریمارکس دیئے کہ کسی کو خوش کرنے کے لئے عدالتی حکم عدولی کی گئی۔

 

کمشنر راولپنڈی نے عدالت میں مؤقف اختیار کیا کہ وہ روزے سے ہیں اور انہوں نے ایسا کوئی حکم نہیں دیا، جس پر جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ ایسی کہانیاں نہ سنائیں کہ روزے سے ہوں۔ کیس کی سماعت کے دوران پہلی صف میں بیٹھے سابق اٹارنی جنرل اشتر اوصاف کی طبیعت بگڑ گئی۔ جسٹس عظمت سعید نے ریسکیو سروس کو بلانے کی ہدایت کی۔ کیس کی سماعت میں پہلے وقفہ کیا گیا۔ جس کے بعد شیخ رشید توہین عدالت کیس سمیت کمرہ نمبر دو میں سماعت کے لئے مقرر تمام مقدمات ملتوی کر دیئے گئے ۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں