پولیس کے دعوے دھرے رہ گئے،خواجہ سراؤں کو قتل کرنے والے قاتل آزاد

پشاور (پبلک نیوز) پولیس کے سارے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے۔ خواجہ سراؤں کو قتل کرنے والے سارے قاتل آزاد۔

تفصیلات کے مطابق پشاور رنگ روڈ پر چٹکی نامی خواجہ سرا کو اس کے دوست سمیت قتل کرنے والا درندہ آصف ایک بار پھر باہر آ گیا۔ خواجہ سرا چٹکی نے تالاب لوہار میں شکایت درج کروا دی کہ آصف نے میری غلط فہمی میں  میری ہم نام چٹکی کو پشاور رنگ روڈ پر اس کے ساتھی سمیت قتل کر دیا تھا اور اب پھر باہر آکر میری جان کے درپے ہیں۔

چکی نے بتایا کہ آصف کے خلاف مختلف تھانوں میں سات سے زائد شکایات درج کروا چکے ہیں لیکن پولیس کو اس کی جانب چال میں کوئی دلچسپی نہیں ہے۔

چٹکی نے کہا کے اس کی جان کو شدید خطرہ ہے۔ اس کی درخواست پر پولیس نے ملزم آصف کو حوالات میں بند کررکھا ہے۔ لیکن وہ نہ تو متعلقہ دفعات لگاتے ہیں اور نہ ہی اس کی جان بچانے میں سنجیدہ ہیں۔ آصف کے گھر والوں کی طرف سے شدید دھمکیاں مل رہی ہیں اور اسے ڈر ہے کہ وہ اسے باہمی کل کر جان سے مار دے گا۔

چٹکی نے وزیراعلی خیبرپختونخواہ اور چیف جسٹس پشاور ہائیکورٹ سے اپیل کی کہ اس سے حفاظت اور انصاف دلانے میں اپنا کردار ادا کریں۔ چٹکی نے کہا کہ خواجہ سراؤں کی حفاظت کے حوالے سے کوئی پالیسی موجود نہیں۔ انہیں دوسال سے بتایا جا رہا ہے کہ پالیسی تیار ہیں اور جلدی صوبہ میں اسے نافذ کردیا جائے گا۔

چٹکی نے کہا خواجہ سرا سپریم کورٹ آف پاکستان میں اپیل کریں گے تمام محکموں کے خلاف کاروائی کی جائے جو خواجہ سراوں کے خلاف تشدد کی روک تھام کی پالیسی نافذ کرنے میں ناکام رہے۔

چٹکی نے  کہا کہ وہ اپنی جان کی حفاظت کے معاملے میں مایوس ہوچکی ہیں. شہریوں کی جان و مال کی حفاظت حکومت کی اولین ذمہ داری ہے. انہوں نے اپیل کی کے متعلق ادارے اپنی ذمہ داریوں کو پورا کریں

خواجہ سراؤں کی ایسوسی ایشن کی صدر فرزانہ جان نے اس موقع پر کہا کہ پولیس کاشعبہ تفتیش نہایت ہی ناقص تفتیش کرتا ہے جس کی وجہ سے ملزموں کو فوری رہائی مل جاتی ہے۔ ایف آئی آر کے اندراج کے وقت متعلقہ دفعات نہیں لگائی جاتی اوریا اتنے جھول چھوڑ دیے جاتے ہیں کہ ملزموں کو عدالتوں سے رہائی مل جاتی ہے۔

فرزانہ جان نے کہا کہ پولیس کے ساتھ دو میٹنگز ہوچکی ہیں۔ ہمیں بتایا گیا ہے کہ پولیس کی جانب سے دو کمیٹیاں تشکیل دے دی گئی ہیں لیکن ابھی تک اس کا نوٹیفیکیشن نہیں ملا۔ جب تک یہ کمیٹی اپنا کام شروع نہیں کرتی خواجہ سراؤں کے مسائل  حل ہونے کی کوئی امید نہیں۔

فرزانہ جان نے بتایا کہ اگلے ہفتے انہیں اسمبلی بلایا گیا ہے جس میں ان مسائل پر تفصیلی بات ہوگی۔

احمد علی کیف  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں