افسر ہم سے چائے بنواتے اور برتن دھلواتے ہیں، کسٹم اہلکاروں کی وزیر اعظم سے شکایت

اسلام آباد (فیصل ساہی) کسٹم اہلکار ہیں یا ذاتی ملازم؟ پاکستان سٹیزن پورٹل میں اپنی نوعیت کی منفرد درخواست آئی۔ کسٹم اہلکاروں نے وزیراعظم سے اپنے اعلیٰ افسروں کی شکایت کر دی۔ ملک کے لیے کچھ کرنے کے لیے محکمہ میں آئے تھے۔ چائے بنانے میں لگا دیا گیا۔ کسٹم اہلکار کی دہائی پبلک ہو گئی۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان سیٹیزن پورٹل میں آئی اپنی نوعیت کی انوکھی درخواست آ گئی۔ کسٹم اہلکار نے وزیراعظم کو شکایت لگا دی۔ اپنے افسروں کی افسریاں کھول کے رکھ دیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ملک کے لیے جان قربان کرنے کا شوق تھا، تربیت بھی دی گئی اور پھر چائے بنانے پر لگا دیا گیا۔

ناراض کسٹم اہلکاروں نے اپنی درخواست میں شکایت کی ہے کہ حکومت نے کروڑوں روپے کے اخراجات کر کے انہیں تربیت دی۔ سارا دن ذاتی ملازم بنا کر گھروں میں کام پر لگا دیا گیا ہے۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ کسٹم ہاوس اسلام آباد میں گریڈ اکیس کے افسر کے ساتھ پانچ اہلکار ذاتی خدمات پر مامور ہیں۔

شکایت میں وزیراعظم سے استدعا کی گئی ہے کہ انہیں ذلت سے نجات دلائی جائے۔ کسٹم کی وردی پہن کر برتن دھوتے ہیں اور کچن میں کام کرتے ہیں۔ وزیر اعظم کو بھیجی گئی درخواست ممبر کسٹمز کے ذریعہ چیف کلیکٹر کسٹمز تک پہنچ گئی۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کسٹم معیشت کا ستون ہے اور اس کے سپاہی اس محکمے کا حصہ ہیں۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں