اردو ڈرامے کی تاریخ آغا حشر کاشمیری کے بغیر نامکمل

لاہور (پبلک نیوز) جس طرح انگریزی ادب کی تاریخ ولیم شیکسپئر کے بغیر مکمل نہیں ہوتی، اسی طرح اردو ڈرامے کی تاریخ آغا حشر کاشمیری کے بغیر نامکمل ہے، آج آغا حشر کاشمیری کی 84ویں برسی منائی جا رہی ہے۔

 

1879 کو بنارس میں پیدا ہونے والے آغا محمد شاہ جن کو دنیا آغا حشر کاشمیری کے نام سے جانتی ہے کے پاس ڈرامائی آہنگ برتنے کا قدرتی ملکہ، فنی مہارت اور پلاٹ کی بنت کا ہنر بدرجہ اتم موجود تھا، شیکسپیئر کے ڈراموں کو اردو زبان میں ڈھالا اور ہندوستان کے بچے بچے کی زبان پر چڑھ آغا حشر کا نام چڑھ گیا۔

 

تراجم کے علاوہ اردو ڈرامے بھی لکھے، یہودی کی لڑکی اور رستم و سہراب نے آغا حشر کی شہرت کو چار چاند لگا دیئے۔ ہندوستان کے اس شیکسپیئر کا انتقال 28 اپریل 1935 کو لاہور میں ہوا۔

حارث افضل  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں