سندھ کابینہ میں چوتھی مرتبہ توسیع کا فیصلہ، ارکان کی فہرست تیار

کراچی(منیر ساقی) سندھ کابینہ میں چوتھی مرتبہ رواں ہفتے توسیع کئے جانے کا امکان، دو وزیر ایک ایک مشیر اور معاون خصوصی لیئے جائیں گے۔ مزید اراکین کی فہرست تیار کر لی گئی۔

سندھ کے سائین کی کابینہ میں ایک بار پھر اضافے کا فیصلہ، مزید اراکین کی فہرست تیار، انتظار ہے تو پارٹی چیئرمین کی حتمی منظوری کا۔ کابینہ میں سندھ کے دیگر اضلاع کو نمائندگی دینے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔ قمبر شھداد کوٹ سے تعلق رکھنے والے سابق وزیر خوراک میرنادر مگسی کو بھی کابینہ میں لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ میر نادر مگسی متعدد بار اور سابق وزیراعلی سید قائم علی شاھ ادوار میں کابینہ کا حصہ رہ چکے ہیں۔

 

کابینہ میں تھر کو بھی نمائندگی دینے کے لیے سابق وزیراعلی سندھ ارباب غلام رحیم کے بھتیجے ارباب لطف اللہ کو بھی وزیر بنانے کا فیصلہ کر لیا گیا۔ ارباب لطف اللہ اپنی روایتی سیاست سے بغاوت کے بعد ارباب رحیم سے جدا سیاست کرتے ہوئے گذشتہ دور میں پیپلز پارٹی میں شامل ہوئے تھے۔

 

کابینہ میں جیکب آباد سے تعلق رکھنے والے اعجازجاکھرانی کو وزیر اعلی سندھ کا مشیر بنایا جائے گا۔ اعجاز جاکھرانی پارٹی کے شریک چیئرمیں آصف علی زرداری کے قریبی دوست کی حیثیت رکھتے ہیں۔ حالیہ توسیع کے بعد سندھ کی کابینہ میں توسیع کے بعد اراکین میں 18وزیر 3 مشیر اور 7 معاونین خصوصی ہو جائیں گے۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں