پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنے یا شامل کرنے کا فیصلہ اگلے ماہ ہوگا

اسلام آباد (پبلک نیوز) پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنے یا بلیک لسٹ شامل کرنے کا فیصلہ اگلے ماہ ہوگا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان کو آئندہ 4 ہفتوں کے دوران بھرپور سفارتی کوششیں کرنی ہوں گی۔ گرے لسٹ سے نکلنے کے لیے پاکستان کو 15 ووٹ درکار ہیں۔ بلیک لسٹ سے بچنے کے لیے 3 ووٹ ہر صورت حاصل کرنا ہوں گے۔

 

تفصیلات کے مطابق پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنے یا بلیک لسٹ شامل کرنے کا فیصلہ اگلے ماہ ہوگا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان کو آئندہ 4 ہفتوں کے دوران بھرپور سفارتی کوششیں کرنی ہوں گی۔ گرے لسٹ سے نکلنے کے لیے پاکستان کو 15 ووٹ درکار ہیں۔ بلیک لسٹ سے بچنے کے لیے 3 ووٹ ہر صورت حاصل کرنا ہوں گے۔

 

ذرائع کا کہنا ہے کہ حکومت کو تکنیکی امور پر کام کرنے کے ساتھ ساتھ سفارتی محاذ کو خالی نہیں چھوڑنا چاہیے۔ فنانشل ٹاسک فورس کی گرے لسٹ سے نکلنے کے لیے حمایت اور مطلوبہ تعداد میں ووٹس حاصل کرنا ضروری ہیں۔ فلوریڈا میں ایف اے ٹی ایف کا پلانری اینڈ ورکنگ گروپ اجلاس 16 سے 21 جون تک  ہوگا۔

 

واضح رہے کہ یہ اجلاس پاکستان کے گرے لسٹ سے چھٹکارے کے لیے انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔  گرے سے بلیک لسٹ میں شامل ہونے کے سنگین اقتصادی نتائج ہوں گے۔

حارث افضل  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں