سزا یافتہ 3 افسران کو سول جیل حکام کے حوالے کردیا گیا: ڈی جی آئی ایس پی آر

اسلام آباد(سلمان علی اعوان) پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور کا کہنا ہے کہ 30 مئی کو سزا پانے والے افسران کو سول جیل حکام کے حوالے کر دیا گیا، سزایافتہ افسران سے متعلق انٹیلی جنس معلومات ملتے ہی گرفتار کیا گیا۔

 

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور نے سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر پیغام دیتے ہوئے بتایا کہ 30 مئی کو سزا پانے والے دو آرمی اور ایک سویلین افسر کو سول جیل حکام کے حوالے کر دیا گیا ہے۔ تینوں افسران کو جرائم کی تصدیق کے فوری بعد حراست میں لے لیا گیا تھا، سزایافتہ افسران سے متعلق انٹیی جنس معلومات ملتے ہی گرفتار کیا گیا اور تینوں افسران ٹرائل کے دوران فوج کی حراست میں رہے۔

قبل از وقت پاک فوج کے تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق چیف آف آرمی سٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے جاسوسی کے جرم میں 2 فوجی اور 1 سویلین اہلکار کی سزاؤں کی توثیق کر دی۔ فوجی اور 1 سویلین اہلکار پر حساس معلومات غیر ملکی ایجنسیوں کو فراہم کرنے کا جرم ثابت ہوا۔ فوجی افسروں کا پاکستان آرمی ایکٹ اور آفیشل سیکرٹ ایکٹ کے تحت ٹرائل کیا گیا۔ جاسوسی کے جرم میں لیفٹیننٹ جنرل جاوید اقبال کو 14 سال قید بامشقت، بریگیڈئیر راجا رضوان (ر) کو جرم ثابت ہونے پر سزائے موت کی توثیق جبکہ حساس ادارے کے ملازم ڈاکٹر وسیم اکرم کو بھی سزائے موت توثیق کی گئی ہے۔

ویڈیو کیلئے کلک کریں:

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں