ٹیکس چھوٹ کے معاملے پر حفیظ شیخ، مشیر تجارت میں اختلافات سامنے آ گئے

اسلام آباد(راجہ عثمان)ٹیکس چھوٹ ختم کرنے کا معاملہ، مشیر خزانہ حفیظ شیخ اور مشیرتجارت عبد الرزاق داؤد میں اختلافات۔ فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے بھی ٹیکس چھوٹ جاری رکھنے کی مخالفت کر دی ہے۔

 

ٹیکس چھوٹ کے معاملے پر مشیر خزانہ حفیظ شیخ اور مشیر تجارت عبد الرزاق داؤد میں اختلافات سامنے آ گئے۔ مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ 5 برآمدی شعبوں کی ٹیکس چھوٹ ختم کرنا چاہتے ہیں۔ جبکہ مشیر تجارت عبدالرزاق دائود زیرو ریٹنگ کی سہولت برقرار رکھنے کے خواہشمند ہیں۔ مشیر خزانہ حفیظ شیخ کا مؤقف ہے کہ زیرو ریٹنگ کے باوجود برآمدات میں اضافہ نہیں ہو رہا۔

 

دوسری جانب مشیر تجارت رزاق داؤد کہتے ہیں کہ ٹیکس چھوٹ ختم کرنے سے برآمدات مزید متاثر ہوں گی۔ ملکی برآمدات پہلے سے ہی مشکلات کا شکار ہیں جن میں مذید اضافہ ہو گا۔ ذرائع کے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے بھی ٹیکس چھوٹ جاری رکھنے کی مخالفت کر دی۔ بی آر کے مطابق 5 برآمدی شعبوں کو برآمدات پر ٹیکس چھوٹ حاصل ہے۔ ٹیکسٹائل، لیدر، اسپورٹس، سرجیکل آلات اور کارپٹس کو زیرو ٹیکس کی سہولت دی گئی ہے اور پانچوں برآمدی شعبے زیرو ریٹنگ کی سہولت کا غلط استعمال کر رہے ہیں۔ حکومت نے ایکسپورٹ سیکٹر کے لئے بجلی اور گیس کی قیمتیں بھی نہیں بڑھائیں۔

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں