جعلی بینک اکاؤنٹس کا نیا کیس منظرعام پر آگیا، لڈوفروش نابینا کروڑ پتی نکلا

کراچی(پبلک نیوز) نابینا اور تل کے لڈو فروخت کرنے والا بھی کروڑ پتی نکلا، ایف بی آر کا متاثرہ شہری کے گھر چھاپہ، ایف بی آر کے مطابق اکاؤنٹ سے ڈھائی کروڑ روپے کی ٹرانزیکشن ہوئی، جبکہ متاثرہ شہری لیاقت کا کہنا ہے ایف بی آر کے چھاپے کے بعد کمپنی اور جعلی اکاؤنٹ کا علم ہوا۔

 

پاکستان کے غریب عوام راتوں رات کروڑ پتی بننے کا سلسلہ رک نہ سکا، جعلی بینک اکاؤنٹس کے ذریعے جعلی کمپنیاں بنانے کا ایک اور کیس منظر عام پر آگیا اور اس بار تل کے لڈو بیچنے والا نا بینا شخص کے نام جعلی اکاؤنٹس اور اور کمپنی کھلنے اور اکاؤنٹ سے کروڑوں روپے کی ٹرانزیکشن کا انکشاف ہوا ہے۔

 

ایف بی آر کا متاثرہ شہری کے گھر چھاپہ مارنے پر اسکو علم ہوا کہ اس کے نام ایک کمپنی ہے اور اس کے اکاؤنٹ سے ڈھائی کروڑ روپے کی ٹرانزیکشن ہوئی ہے، لیاقت نامی نابینا شہری کا کہنا تھا کہ میراشناختی کارڈ 3 بار کھوچکا ہے جس کے مقدمات بھی درج کرائے تھے۔

 

ایف بی آر کے مطابق سینٹر ون ٹریڈ کے نام سے محمد لیاقت کے نام سے کمپنی کھولی گئی، کمپنی 4 جون 2013 میں بنائی گئی، جبکہ کمپنی ایف بی آر میں سیلز ٹیکس میں بلیک لسٹ ہے، شہری کو چند روز بعد ایف بی آر کے دفتر بھی طلب کیا گیا ہے۔

عطاء سبحانی  5 ماه پہلے

متعلقہ خبریں