ضلعی انتظامیہ نے پناہ گاہوں میں آکر قیام کرنے والے افراد کی رپورٹ جاری کر دی

لاہور(پبلک نیوز) پناہ گاہوں میں آ کر قیام کرنے والے افراد کی رپورٹ جاری کر دی گئی۔ 22 نومبر سے اب تک 5000 سے زائد بے آسرا اور بے گھر افراد نے ان میں آکر قیام کیا۔ موسم کی خرابی کے پیش نظر متبادل انتظام بھی کیا گیا ہے۔

 

ضلعی انتظامیہ کی جاری کردہ رپورٹ کے مطابق لاہور میں پانچ مقامات پر پناہ گاہوں کا آغاز 22 نومبر سے کیا گیا۔ پناہ گاہیں داتا دربار، ٹھوکر نیاز بیگ، بادامی باغ سبزی منڈی، لاڑی اڈہ اور ریلوے اسٹیشن پر بنائی گئیں۔ روزانہ 230 افراد اوسطاً ان پناہ گاہوں میں قیام کرتے ہیں۔ جمعہ اور ہفتہ کو ان کی تعداد 300 ہو جاتی ہے۔

 

رپورٹ کے مطابق پناہ گاہوں میں آنے والوں کے ساتھ خوش اخلاقی اور پیار سے پیش آیا جاتا ہے۔ سوشل ویلفیئر، ایل ڈیبلیو ایم سی، سول ڈیفنس کاعملہ پناہ گاہوں میں موجود رہتا ہے۔آنے والے افراد کو گھر جیسا ماحول فراہم کیا جاتا ہے۔ انتظامات اور کھانا و ناشتہ کی تقسیم کا جائزہ لینے کے لیے افسران روزانہ کی بنیاد پر دودے کرتے ہیں۔

 

ڈی سی لاہور صالحہ سعید کا کہنا ہے کہ ضلعی انتطامیہ پناہ گاہوں پر پوری توجہ دے رہی ہے۔ کھانے کے معیار و کوالٹی کو برقرار رکھا جا رہا ہے۔ موسم کی خرابی کے پیش نظر متبادل انتظام بھی کیا گیا ہے۔ لاہور میں پانچ مقامات پر پناہ گاہوں کا آغاز 22 نومبر سے کیا گیا۔ 22نومبر سے اب تک 5000 سے زائد بے اسرا و بے گھر افراد نے ان میں آکر قیام کیا۔

عطاء سبحانی  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں