ڈالر کی ایک اور لمبی جست، اوپن مارکیٹ میں 154 روپے کا ہو گیا

اسلام آباد(راجہ عثمان طاہر) روپے کی بے قدری نے ڈالر کے دام کو آگ لگا دی، ڈالر مزید تین روپے مہنگا ہو گیا اور ایک سو چون روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ کر نئی تاریخ رقم کر دی، ادھر ڈالر کی بلیک مارکیٹ روکنے کے لیے سابق مفتی اعظم پاکستان مفتی تقی عثمانی نے فتویٰ دے دیا۔

 

ڈالر کی ایک اور لمبی جست، اوپن مارکیٹ میں ڈالر مزید 3 روپے مہنگا ہو کر 154 روپے کا ہو گیا، انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت 2 روپے 27 پیسے اضافے سے 151.92 روپے ہو گئی، گزشتہ روز انٹربینک میں ڈالر ایک روپے 78 پیسے مزید مہنگا ہوکر 149 روپے 65 پیسے جب کہ اوپن مارکیٹ میں ایک روپے مہنگا ہوکر 152 روپے پہنچا تھا۔

 

دوسری جانب ڈالر کی قدر میں اضافے کی ایک وجہ ذخیرہ اندوزی بھی ہے سابق مفتی اعظم پاکستان مفتی تقی عثمانی نے ڈالر خریدنے والوں کے خلاف سخت فتویٰ جاری کر دیا، مفتی تقی عثمانی کے مطابق اس وقت نفع کیلئے ڈالر خریدنا ملک سے بے وفائی اور'گناہ' ہے، انہوں نے کہا کہ قیمت بڑھنے پر بیچنےکی نیت سے ڈالر خریدنا ذخیرہ اندوزی ہے جو کہ شرعا گناہ ہے جس پر روایت میں لعنت آئی ہے۔

عطاء سبحانی  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں