ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس فیصلہ کن مرحلہ میں داخل ہو گیا

اسلام آباد(پبلک نیوز) ڈاکٹر عمران فاروق قتل کیس کی سماعت، ایف آئی اے نے ساڑھے تین سال بعد شہادتیں مکمل کر لیں، عدالت نے آئندہ سماعت پر ملزمان کا بیان قلمبند کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ آئندہ سماعت پر ملزمان کو سوالنامہ دیا جائے گا۔

 

اسلام آباد کی انسداد دہشت گردی عدالت میں عمران فاروق قتل کیس کی سماعت ہوئی، ایف آئی اے نے ساڑھے تین سال بعد شہادتیں مکمل کر لیں، ایف آئی اے نے شہادتیں مکمل ہونے کا بیان دے دیا۔ بیان میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ تمام دستیاب شواہد عدالت کے سامنے رکھ دیئے ہیں۔ فی الحال مزید شواہد نہیں ہیں۔

متعلقہ خبر:ڈاکڑ عمران فاروق قتل کیس کے شواہد حاصل کرنے کیلئے برطانوی حکومت سے رابطہ

ایف آئی اے کی شہادتیں مکمل ہونے کے بعد عمران فاروق قتل کیس فیصلہ کن موڑ میں داخل ہو گیا،عدالت نے ملزمان کا بیان قلمبند کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ آئندہ سماعت پر ملزمان کو سوالنامہ دیا جائے گا۔ خالد شمیم، محسن علی اور معظم کا 342 کے تحت بیان قلمبند کیا جائے گا۔ کیس کی سماعت 10 اپریل تک ملتوی کر دی گئی۔ عمران فاروق قتل کیس کا مقدمہ دسمبر 2015ء میں درج ہوا تھا۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں