مشیر خزانہ کو پارلیمنٹ میں آکر حالیہ قرض پر بریفنگ دیں: پیپلز پارٹی

اسلام آباد (پبلک نیوز) ترجمان پاکستان پیپلز پارٹی ڈاکٹر نفیسہ شاہ نے کہا ہے کہ فنانس کمیٹی کے چئیرمین اسد عمر بننے جارہے ہیں۔ یہ مسئلہ ہم فنانس منسٹر کے سامنے بھی رکھیں گے۔ چئیرمین بلاول بھٹو نے گورنر اسٹیٹ بینک اور چئیرمین ایف بی آر کی تعیناتی پر تحفظات کا اظہار کیا۔ یہ دونوں تعیناتیاں شاہی فرمان تھیں۔

 

اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہونے ان کا کہنا تھا کہ چئیرمین بلاول بھٹو نے گورنر اسٹیٹ بینک اور چئیرمین ایف بی آر کی تعیناتی پر تحفظات کا اظہار کیا۔ یہ دونوں تعیناتیاں شاہی فرمان تھیں۔ ایک شاہی فرمان لوکل حکومت پر بریفنگ دے رہے تھے۔ وزیر اعظم صاحب ایک سوال کے جواب کے اوپر تعینات کر رہے ہیں۔

 

نفیسہ شاہ کا کہنا تھا کہ پرائیوٹ سیکٹر سے آنے والے بندے کی تعیناتی قوانین کے مطابق ہونی چاہیے۔ وزیر اعظم نے پیپرا رولز کی خلاف ورزی کی ہے۔ ایف بی آر میں تحلقہ مچا ہوا ہے اس کا ازالہ کیا ہوگا۔ نفیسہ شاہ کا سوال کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ایف بی آر نے جن لوگوں کو لسٹڈ کیا ہے وہ کافی کمپٹینٹ لوگ ہیں۔ شبر زیدی کی فرگوسن کمپنی ایف بی آر کے خلاف عدالت میں ہے۔ ایف بی آر اور فرگوسن کمپنی کا ایک ارب روپے کے ٹیکس کا تنازعہ ہے۔ کیا یہ مفادات کا ٹکراو نہیں ہے۔ شبر زیدی ایف بی آر یا اپنی فرم کا تحفظ کریں گے۔

 

ان کا کہنا تھا کہ فنانس کمیٹی کے چئیرمین اسد عمر بننے جارہے ہیں۔ یہ مسئلہ ہم فنانس منسٹر کے سامنے بھی رکھیں گے۔ شبر زیدی کارپوریٹ سیکٹر کے تحفظ پر کام کریں گے۔ آئی ایم ایف کے ساتھ نہ کمیٹی چئیرمین اور نہ ہی کسی ممبر سے مشاورت کی ہے۔ اگر پارلیمنٹرین نے آئی ایم ایف وفد سے ملاقات کی ہے تو وہ اچھی بات ہے۔ لیکن تمام سیاسی جماعتوں کو ساتھ لے کر چلنا ہوگا۔

 

ان کا مزید کہنا تھا کہ مشیر خزانہ کو پارلیمنٹ میں آکر حالیہ قرض پر بریفنگ دینا ہوگی۔ شاید وزیر اعظم کو وحی نازل ہوئی یا خواب آیا ہے کہ مصر میں بیٹھے شخص کو اسٹیٹ بینک کا گورنر تعینات کردیا۔ پوری دنیا میں پاکستانی کام کر رہے ہیں لیکن آئی ایم ایف کا بندہ ہی کیوں ملا؟

حارث افضل  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں