سعودی آئل ریفائنریز پر ڈرون حملہ، خطے میں نئی جنگ چڑھنے کا خدشہ

 

پبلک نیوز: سعودی عرب میں آئل ریفائنریز پر ڈرون حملہ ہوا ہے اور امریکا نے ایران پر الزام عائد کر دیا ہے۔ سعودی ولی عہد محمد بن سلمان نے ملکی سلامتی اور استحکام کے لیے مدد فراہم کرنے کی امریکی صدر کی پیشکش ٹھکرا دی ہے۔

 

تفصیلات کے مطابق امریکا نے سعودی عرب میں تیل کی دو تنصیبات پر ڈرون حملوں کا الزام ایران پر لگا دیا۔ امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے یمن حوثی باغیوں کی جانب سے حملے کی ذمہ داری لینے کے بیان کو مسترد کرتے ہوئے حملوں کا الزام ایران پر عائد کیا۔

 

دوسری جانب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے ٹیلی فون پر گفتگو میں سعودی عرب کی سلامتی اور استحکام میں مدد دینے کی پیشکس کی۔ جس پر سعودی ولی عہد کا جواب میں کہنا تھا کہ مملکت اس طرح کی دہشت گردانہ جارحیت سے نمٹنے کی صلاحیت اور عزم رکھتی ہے۔

 

واضح رہے کہ گزشتہ روز سعودی عرب میں دو آئل ریفائنریز پر ڈرون حملے کیے گئے جس کے سبب سعودی عرب کی آدھی سے زیادہ آئل پروڈکشن کو بند کر دیا گیا۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں