سی ڈی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کی گمشدگی کا ڈراپ سین ہو گیا

اسلام آباد (پبلک نیوز) سی ڈی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کے اغواء کی خبروں کا ڈراپ سین ہو گیا ہے۔ سی ڈی اے اسسٹنٹ ڈائریکٹر ڈیرہ اسماعیل خان پہنچ گئے۔ ایاز محسود گھر والوں کو بتائے بغیر اسلام آباد سے روانہ ہوئے۔

سی ڈی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کے اغواء کی خبروں کی خبریں جھوٹی ثابت ہو گئیں۔ سی ڈی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر ایاز خان محسود کا اپنا ویڈیو پیغام سامنے آ گیا، جس میں انھوں نے اغواء کی خبروں کی سختی سے تردید کی۔

محمد ایاز خان محسود کا کہنا ہے کہ میں بالکل محفوظ اور اپنے رشتہ داروں کے پاس ہوں۔ پشتون تحفظ تحریک، ٹی وی چینلز اور سوشل میڈیا پر اغواء کے پروپیگنڈہ میں مصروف ہے۔ میرے موبائل فونز گم ہو گئے۔ گھر والوں سے رابطہ نہ کر سکا۔ خدارا ملک اور اداروں کو بدنام نہ کریں۔

خیال رہے کہ ان کی گمشدگی کی خبریں منظر عام پر آنے پر سی ڈی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر کی بازیابی میں اسلام آباد پولیس متحرک رہی۔ ایاز خان کے قریبی دوست نور عالم کے ذریعہ پولیس نے ڈراپ سین کروایا۔ پولیس حکام نے ایاز خان محسود کی اہلیہ سے بھی رابطہ کیا۔

واضح رہے کہ اسلام آباد پولیس حکام کے کہنے پر ہی ایاز خان محسود نے ویڈیو بیان جاری کیا۔

اس سے قبل خبریں منظر عام پر آئیں کہ سی ڈی اے ڈپٹی ڈائریکٹر ایاز محسودُ کل دوپہر سے آفس سے لاپتہ ہیں۔ لاپتہ افسر کی سرکاری گاڑی سی ڈی اے آفس میں کھٹری ہے۔ جس پر پولیس نے کارروائی کا آغاز کیا۔

احمد علی کیف  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں