"تعلیم سب کیلئے" پالیسی کے تحت حکومت کا اہم اقدام

اسلام آباد (پبلک نیوز) ملک میں تعلیمی اصلاحات کے لیے وفاقی حکومت پرعزم، تعلیم سب کے لیے پالیسی کے تحت حکومت کا اہم اقدام، وفاقی درالحکومت کے گیارہ ہزار آوٹ آف سکولز بچوں کو سکولز میں داخلہ دینے کی سب تیاریاں مکمل کر لیں گئیں۔

 

کوئی بھی بچہ سکول جانے سے نہ رہے، وفاقی حکومت نے حکمت عملی بنالی۔ وزرات تعلیم نے وفاقی دارالحکومت کے 11 ہزارآؤٹ آف سکول بچوں کے داخلے اپریل میں مکمل کرنے کا فیصلہ کرلیا۔ آؤٹ آف سکول بچوں کو 3 مرحلوں میں داخل کیا جائے گا۔ معمول کے داخلوں کے علاوہ آؤٹ آف سکول بچوں کے لیے مختلف کلاسوں کا داخلہ فارم جاری کیا جائے گا۔

 

ذرائع کا کہنا ہے کہ ان بچوں کے داخلوں کے بعد 1000 سے زائد ڈیلی ویجز اساتذہ کے باوجود سیکٹرز کے تعلیمی اداروں میں اساتذہ کی کمی کا سامنا بھی ہوسکتا ہے۔ وزارت تعلیم عدالتی حکم امتناع اور فیصلوں کی وجہ سے اساتذہ کی نئی بھرتی نہیں کر سکے گی۔ وزرات تعلیم کا مؤقف ہے کہ اساتذہ کی کمی دوسرے مرحلے میں آئے گی جس کے لیے لائحہ عمل تیار کیا جا رہا ہے۔

 

ترجمان وزارت تعلیم کے مطابق سروے میں رجسٹرڈ کیے گئے آؤٹ آف سکول بچوں کو 100 فیصد داخلہ دیا جائے گا۔ بچوں کو یونیفارم اور سکول بیگ کے علاوہ گفٹ دینے کا بھی پلان بنایا گیا ہے۔

حارث افضل  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں