انگلینڈ نے آسٹریلیا کو شکست دیکر ورلڈ کپ کے فائنل کیلئے کوالیفائی کرلیا

 

برمنگھم(پبلک نیوز) انگلینڈ نے آسٹریلیا کو شکست دیکر ورلڈ کپ کے فائنل کیلئے کوالیفائی کرلیا، انگلش ٹیم نے224رنز کا ہدف باآسانی 2 وکٹوں پر پورا کرلیا، انگلینڈ اورنیوزی لینڈ کے درمیان 14جولائی کو فائنل ٹاکرا ہوگا۔

 

ورلڈ کپ کے دوسرے سیمی فائنل میں انگلینڈ نے آسٹریلیا کو پچھاڑ کر 27 سال بعد عالمی کپ کے فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا۔ اب انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کے درمیان اتوار کو ورلڈکپ کا آخری ٹاکرا ہوگا۔ دونوں ٹیمیں ایک بار بھی عالمی کپ نہیں جیت سکیں جب کہ انگلش ٹیم 40 سال بعد اپنی سرزمین پر ورلڈکپ کا فائنل کھیلے گی۔

 

224 رنز کے تعاقب میں جونی بیرسٹو اور جیسن روئے نے جارحانہ بیٹنگ کرتے ہوئے 124 رنز کی اوپننگ پارٹنرشپ بنائی۔انگلینڈ کی پہلی وکٹ جونی بیرسٹو کی صورت میں گری جو 34 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔ جب کہ جیسن روئے 85 رنز پر کیچ آؤٹ ہوئے۔

 

147 رنز پر دوسری وکٹ گرنے کے بعد تجربہ کار جوئے روٹ اور کپتان مورگن نے تیز رفتاری سے رنز بنانے کے سلسلے کو برقرار رکھتے ہوئے جارحانہ بیٹنگ کی اور 33 ویں اوور میں 224 رنز کا ہدف حاصل کرلیا۔ جوئے روٹ اور مورگن 33،33 رنز بنا کر ناقابل شکست رہے۔

 

سب سے زیادہ وکٹیں حاصل کرنے والے مچل اسٹارک بھی ہدف کا دفاع کرنے میں ناکام رہے۔ البتہ ان کے حصے میں ایک وکٹ آئی جس کے لیے انہیں 64 رنز دینے پڑے جب کہ کمنز نے بھی ایک وکٹ حاصل کی۔

 

 آسٹریلیا نے انگلینڈ کے خلاف ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا تھا۔ آسٹریلیا کی جانب سے اننگز کا آغاز ایرون فنچ اور ڈیویڈ وارنر نے کیا تاہم دونوں اوپنر صرف 10 کے مجموعی اسکور پر آئوٹ ہوگئے۔ کچھ ہی دیر بعد پیٹر ہینڈز کومب بھی صرف 4 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے۔

 

ٹاپ آرڈر کی بری بیٹنگ کے بعد اسٹیو اسمتھ اور الیکس کیرے نے محتاط انداز میں بیٹنگ کرتے ہوئے ٹیم کا اسکور آگے بڑھایا اور 103 رنز کی پارٹنر شپ قائم کی۔ جس کے بعد 46 رنز بناکر آؤٹ ہوگئے جب کہ کچھ ہی دیر بعد اسٹوئنس بغیر کوئی رن بنائے پویلین لوٹ گئے۔

 

گلین میکسوئل بھی 22 رنز ہی بناسکے، پیٹ کمنز 6 اور مچل اسٹارک 29 رنز بنانے کے بعد آؤٹ ہوئے جب کہ اسٹیو اسمتھ نے ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے اسکور کو آگے بڑھایا تاہم وہ آخری لمحات میں 85 رنز بنانے کے بعد رن آؤٹ ہوگئے۔

 

انگلینڈ کی جانب سے کرس ووکس اور عادل رشید نے 3،3 جب کہ جوفرا آرچر نے 2 وکٹیں حاصل کیں۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں