سابق چیف الیکشن کمشنر فخرالدین جی ابراہیم 92 برس کی عمر میں انتقال کر گئے

لاہور (پبلک نیوز) معروف قانون دان فخرالدین جی ابراہیم طویل علالت کے بعد کراچی میں انتقال کرگئے۔ ان کے انتقال پر گورنر وزیراعلیٰ سندھ اراکین سندھ اسمبلی اور سیاسی سماجی جماعتوں نے تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے اسے ملک کا بڑا نقصان قرار دیا ہے۔

 

سابق چیف الیکشن کمشنر اور اٹارنی جنرل آف پاکستان فخرالدین جی ابراہیم 92 برس کی عمر میں انتقال کر گئے۔ 1928 کو بھارتی شہر احمد آباد میں پیدا ہونے والے فخرالدین جی ابراہیم اپنے کرئیر کے دورن متعدد اہم عہدوں پر فائز رہے۔

 

قیام پاکستان کے بعد انہوں نے ایس ایم لاکالج سے ایل ایل ایم کیا۔ انیس سوساٹھ میں جیورس ڈاکٹر کے اعزاز سے بھی نوازے گئے۔ فخرالدین جی ابراہیم 1972 سے 1980 تک سندھ ہائی کورٹ کے جج رہے۔ 1981 میں سپریم کورٹ کے ایڈہاک جج مقرر ہوئے لیکن ضیا الحق کے پی سی او کے تحت حلف اٹھانے سے انکار کیا اور عہدہ چھوڑ دیا۔

 

1993 اور1997 میں وہ تین تین ماہ کے لیے عبوری وزیر قانون اور عبوری وزیر انصاف بھی رہے۔ شہید بے نظیرکی پہلی حکومت میں وہ گورنرسندھ  جبکہ دوسرے دور میں وہ اکتوبر 1993 سے اپریل 1994 تک اٹارنی جنرل آف پاکستان بھی رہے۔

 

کراچی میں پولیس اور شہریوں کے مابین بہتر روابط کے لیے 1989 میں انہوں نے سی پی ایل سی کی بنیادرکھی۔ فخرالدین جی ابراہیم ملک کے 24ویں چیف الیکشن کمشنربھی رہے۔ 2013 کے الیکشن کے بعد انہوں نے اپنی آئینی مدت مکمل کیے بغیر استعفیٰ دے دیا تھا۔

 

صدر مملکت، وزیراعظم، آرمی چیف دیگر سیاسی و سماجی شخصیات نے ان کے انتقال پر اہل خانہ سے اظہار تعزیت کیا۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں