کسان مطالبات کی منظوری کیلئے سڑکوں پر آگئے،زرعی پالیسی کے خلاف احتجاج

لاہور(پبلک نیوز) دھرتی کا سینہ چیر کر، خون پسینہ ایک کر کے پاکستان کیلئے اناج اگانے والا کسان بے حال، پنجاب کے 26 اضلاع کے کسانوں کا کھاد کے بڑھتے نرخوں، گنے کی قیمت اور زرعی پالیسی کے خلاف شدید احتجاج۔

 

کسان اتحاد کی ریلی مطالبات کی منظوری کیلئے ٹھوکر نیاز بیگ لاہور پہنچ گئی، جہاں پر انہوں نے رات کھلے آسمان تلے ٹھوکر نیاز بیگ پر گزار دی، کسانوں نے مطالبات منظور نہ ہونے پر پنجاب اسمبلی کے گھیراؤ کا اعلان کر دیا۔ کسان اتحاد کی جانب سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ کھاد اور یوریا کے پرانے نرخ بحال کئے جائیں اور ساتھ ہی گنے کی قیمت کا اعلان اور سابقہ ادائیگیاں کی جائیں۔ کسانوں نے آج چیئرنگ کراس مال روڈ پر دھرنا دینے کا اعلان بھی کیا ہے۔

 

گزشتہ رات کسانوں کی یہ ریلی ملتان روڈ پر مانگا منڈی سے ٹھوکر نیاز بیگ پہنچی۔ ریلی کے باعث ملتان روڈ پر ٹریفک کی روانی بری طرح متاثر ہو کر رہ گئی۔ کسان اتحاد کے نمائندوں نے رحیم یار خان، راجن پور، ملتان، وہاڑی، بہاولپور سمیت پنجاب کے مختلف اضلاع سے لاہور پہنچنا شروع کر دیا ہے۔ کسی ناخوش گوار واقعہ سے نمٹنے کیلئے ٹھوکر نیاز بیگ کو کنٹینر رکھ کر بند کر دیا گیا ہے اور پولیس کی بھاری نفری تعینات کر دی گئی ہے۔

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں