25 جولائی کے الیکشن میں پارٹی 17 سے 4 سیٹوں پرپہنچ گئی، فاروق ستار

کراچی (پبلک نیوز) ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما فاروق ستار نے کہا ہے کہ ذاتی وجوہات کی بناء پر رابطہ کمیٹی سے استعفی دیا۔ فاروق ستار کے جانب سے  رابطہ کمیٹی سے کارکنوں کو پانچ فروری کی پوزیشن پر بحال کرنے کا مطالبہ کردیا گیا۔

کراچی پریس کلب میں ہنگامی پریس کانفرنس میں ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما  فاروق ستار نے رابطہ کمیٹی سے پارٹی کو انٹرا پارٹی الیکشن اور پانچ فرروی کی پوزیشن کی بحالی کا مطالبہ کردیا۔

فاروق ستار کا کہنا تھا کہ مجھے 23 اگست کو پارٹی کی قیادت حادثاتی طور پر ملی تھی۔ گیارہ  فروری کو مجھ سے پارٹی سربراہ خالد مقبول صدیقی نے واپس لے لی۔ میری واپسی کا واحد مقصد پارٹی کو انتشار سے بچانا تھا، پانچ فروری لائن آف ڈیوائیڈ تھی اب پانچ فروری ہی لائن آف جوائن ہو گی۔

فاروق ستار کا کہنا تھا کہ ضمنی الیکشن میں اثر انداز نہیں ہونا چاہتا اور مہاجر عوام سے اپیل کرتا ہوں کہ عامر چشتی بھائی اور صادق افتخار بھائی کو بھاری اکثریت سے منتخب کروائیں۔ ایم کیو ایم کو اس حال پر پنچا دیا گیا کہ 25 جولائی کے الیکشن میں پارٹی 17 سے 4 سیٹوں پرپہنچ گئی۔

حارث افضل  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں