فریال تالپور جوائنٹ وینچر کیس میں نیب راولپنڈی پیش

راولپنڈی (پبلک نیوز) جعلی بینک اکاؤنٹس کیس میں فریال تالپور پہلی بار نیب راولپنڈی میں پیش ہوئیں، سابق صدر کی ہمشیرہ کو جوائٹ وینچر کیس میں سوالنامہ تھمایا گیا، دس روز میں جواب طلب کر لیا گیا۔

 

تفصیلات کے مطابق جعلی بینک اکائونٹس کیس میں پیپلزپارٹی کے رہنماؤں کی ایک کے بعد دوسری پیشی، پہلے وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ آئے اور اب فریال تالپور آئی۔

 

سابق صدر آصف علی زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور نیب اولڈ ہیڈکوارٹرز پہنچیں۔ جونہی ان کی گاڑی اندر داخل ہوئی پولیس نے گیٹ بند کردیا اور ان کے ذاتی محافظوں کو داخلے سے روک دیا۔

 

ڈی جی نیب راولپنڈی عرفان منگی کی سربراہی میں 5 رکنی ٹیم نے فریال تالپور سے جوائنٹ وینچر کیس سے متعلق ایک گھنٹے تک سوالات پوچھے۔ نیب ٹیم نے فریال تالپور کو 22 سوالوں پر مشتمل سوالنامہ فراہم کرتے ہوئے 10 روز میں جواب جمع کرانے کی ہدایت کی۔

 

فریال تالپور کی پیشی کے موقع پر پیپلزپارٹی کی سینیٹر کرشنا کماری، رامیش لال سمیت دیگر رہنماء نیب اولڈ ہیڈکوارٹرز پہنچے۔ پیشی کے بعد سابق صدر کی ہمشیرہ میڈیا سے گفتگو کئے بغیر روانہ ہوگئیں۔

حارث افضل  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں