برطانوی، ہالی وڈ اداکار پاکستان آئیں، شمالی علاقوں میں شوٹنگ کریں: فواد چودھری

لندن (پبلک نیوز) وزیر اطلاعات پاکستان چودھری فوادحسین نے کہا ہے کہ پاکستانی فلمی صنعت کی بحالی و ترقی چاہتے ہیں۔ میڈیا یونیورسٹی کا قیام عمل میں لائیں گے جو فلم اور پرفارمنگ آرٹ سے متعلق تعلیم و تربیت فراہم کرے گی۔

وزیراطلاعات چوہدری فواد حسین نے برطانوی فلم انسٹی ٹیوٹ کا دورہ کیا جہاں انسٹی ٹیوٹ کے اعلیٰ حکام سے ملاقات کی اور مستقبل کے اشتراک پر بات چیت کی۔ وزیراطلاعات نے وفد کو میڈیا یونیورسٹی کے قیام سے بھی آگاہ کیا۔ برطانوی ماہرین کی جانب سے وزیراطلاعات کے ساتھ فلم سے متعلق پیشہ ورانہ امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ برطانوی فلم ماہرین نے دونوں ملکوں کی فلمی صنعتوں کے اشتراک کی تجویز کا خیر مقدم کیا۔

اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہ یونیورسٹی فلم اور پرفارمنگ آرٹ سے متعلق تعلیم و تربیت فراہم کرے گی۔ فلمی صنعت کی بحالی کیلئے فلم فنڈ قائم کیا جائے گا۔ برطانوی اور ہالی وڈ کے اداکار پاکستان آئیں اور شمالی علاقوں میں شوٹنگ کریں۔ پاکستان کے شمالی علاقے دنیا بھر میں قدرتی حسن کی وجہ سے مشہورہیں۔

چودھری فوادحسین نے کہا کہ پاکستان میں فلمی صنعت کی ترقی کے لیے بہت زیادہ ٹیلنٹ ہے۔ حالیہ دنوں میں بیرون ملک سے تربیت یافتہ نوجوانوں نے متعددکامیاب فلمیں بنائیں۔

وزیراطلاعات کی فلم فنڈ کے قیام، سرٹیفکیشن اور تربیت کے لیے برطانوی فلم انسٹی ٹیوٹ سے تعاون پر بھی بات چیت ہوئی۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان فلم انڈسٹری کے لیے تربیت یافتہ افرادی قوت برطانیہ بھیج سکتا ہے۔ سرکاری شعبے میں بچوں کا چینل شروع کرنا چاہتے ہیں۔ پاکستان میں بچوں کی تفریح کے لیے کوئی چینل موجود نہیں۔

برطانوی فلم ماہرین یقین دہانی کرائی کہ پاکستان میں بچوں کے چینل کے لیے معاونت فراہم کریں گے۔ فواد چودھری نے بتایا کہ 1960تک پاکستان فلمسازی میں دنیا کا تیسرا بڑا ملک تھا۔ 1960میں تنزلی شروع ہوئی۔

وزیراطلاعات کا کہنا تھا کہ 2005میں کوئی بھی فلم بن نا پائی۔ 2006سے سینما کی بحالی شروع ہوئی، اب فلمی صنعت ترقی کر رہی ہے۔ اس وقت پاکستان میں 187سینما گھر فعال ہیں۔ آئندہ سالوں میں سینماؤں کی تعداد1000تک بڑھانا چاہتے ہیں۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں