صدر ٹرمپ نے پاکستان سے متعلق اپنی پالیسی تبدیل کر لی: فواد چوہدری

دبئی(پبلک نیوز ) وزیر اطلاعات فواد چوہدری کا کہنا ہے کہ ٹرمپ اور وزیراعظم عمران خان میں ملاقات متوقع ہے۔ پاکستان کاوشوں کو صدر ٹرمپ کی جانب سے سراہا گیا ہے۔ موجودہ بھارتی قیادت سے کوئی بڑے بریک تھرو کی امید نہیں۔


افغانستان میں دیرپا امن کے لئے پاکستانی کوششوں کے صدر ٹرمپ بھی معترف نکلے، وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری نے دبئی میں گلف نیوز کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ صدر ٹرمپ نے پاکستان سے متعلق اپنی پالیسی تبدیل کرلی، افغان طالبان کو مذاکرات کی میز پرلانے کی پاکستان کاوشوں کو صدرٹرمپ کی جانب سے سراہا گیا ہے۔

 

فواد چوہدری نے کہا کہ پاکستان نے افغانستان کے امن عمل میں منصفانہ کردار ادا کیا، افغانستان میں امن و استحکام صرف امریکا نہیں بلکہ پاکستان کے بھی بہترین مفاد میں ہے۔ ٹرمپ اور وزیراعظم عمران خان میں ملاقات بھی متوقع ہے تاہم اس کے لیے افغان طالبان سے مذاکرات کے مثبت نتائج کا انتظار ہے۔

 

پاک بھارت تعلقات کے سوال پر فواد چوہدری نے کہا کہ پاکستان کے مذکرات کے لئے دروازے کھلے ہیں۔ موجودہ بھارتی قیادت سے کوئی بڑے بریک تھرو کی امید نہیں، تاہم بھارت میں انتخابات کے بعد نئی منتخب حکومت سے ایک بار پھر مذکرات کی کوشش کریں گے۔ وفاقی وزیر فوادچودھری نے سول ملٹری تعلقات پر کہا کہ موجودہ حکومت کا یہ خاصا ہے کہ تمام معاملات پر حکومت اور فوج مل کر کام کر رہے ہیں۔ ایک جامع پالیسی کے تحت ملکی مسائل کو حل کیا جا رہا ہے۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں