ایمنسٹی اسکیم: ایف بی آر نے اثاثہ جات ڈکلیئریشن فارم جاری کر دیئے

اسلام آباد(پبلک نیوز) ایف بی آر کی جانب سے ایمنسٹی اسکیم کے لیے اثاثے ظاہر کرنے کے فارم جاری، مقامی اثاثہ جات ظاہر کرنے کیلئے ڈکلیئریشن فارم میں اثاثوں کی الگ الگ تفصیل دینا ہو گی، اثاثے ظاہر کرنے کے فارمز ویب پورٹل پر اپ لوڈ کر دیے گئے۔

 

ایف بی آر نے ایمنسٹی اسکیم کے لیے ظاہر کرنے کے فارم جاری کر دیئے، اثاثے ظاہر کرنے کے فارمز ویب پورٹل پر اپ لوڈ کر دیے، مقامی اثاثہ جات ظاہر کرنے کیلئے ڈکلیئریشن فارم میں اثاثوں کی الگ الگ تفصیل دینا ہو گی۔ شہری ویب پورٹل کے فارم پُر کر کے آن لائن اپنے اثاثہ جات ظاہر کر سکتے ہیں۔ فارم میں ہر کیٹیگری کے اثاثے، ٹیکس کی شرح اور واجب الادا ٹیکس کی رقم کے الگ الگ کالم بنائے گئے ہیں۔

 

فارن کرنسی بے نامی اکاؤنٹ میں دولت کو ظاہر کرنے کیلئے بھی چار فیصد ٹیکس دینا ہو گا۔ پاکستانی کرنسی میں کھولے گئے بے نامی اکاؤنٹس میں موجود دولت پر چار فیصد ٹیکس دینا ہو گا۔ چار فیصد ٹیکس کی ادائیگی پر بے نامی گاڑیاں بھی ظاہر کی جا سکیں گی۔ اثاثہ جات پر عائد ٹیکس کی شرح اور اس پر لاگو ٹیکس واجبات کی رقم کی تفصیل دینا ہو گی۔ فارم میں غیر ملکی غیر منقولہ جائیداد ظاہر کرنے پر چار فیصد ٹیکس دینا ہو گا۔

 

اثاثوں کی ویلیو ایف بی آر کی مقررہ ویلیو سے ڈیڑھ سو فیصد تک مقرر ہو گی، لیکوئیڈ اثاثے ظاہر کر کے واپس لانے نہ لانے پر چھ فیصد ٹیکس دینا ہو گا۔ ڈکلیئریشن پر 30 جون 2019ء تک ٹیکس ادائیگی کی صورت کسی قسم کا جرمانہ ادا نہیں کرنا ہو گا۔ ڈکلیئریشن فارم میں اوپن پلاٹ، زمین، سُپرا سٹرکچر اور اپارٹمنٹ ظاہر کرنے کیلئے ڈیڑھ فیصد ٹیکس دینا ہو گا۔ کمپیوٹرائزڈ پیمنٹ رسید پر ٹیکس کی رقم اور جرمانے کی رقم کی تفصیل بھی دینا ہو گی۔

عطاء سبحانی  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں