پاک چین صنعتی تعاون کو فروغ دینے کیلئے جامع فریم ورک تیار کیا جارہا ہے: خسرو بختیار

اسلام آباد (پبلک نیوز) وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی، ترقی و اصلاحات مخدوم خسرو بختیار نے کہا ہے کہ پاک چین صنعتی تعاون کو فروغ دینے کیلئے جامع فریم ورک تیار کیا جارہا ہے۔ صنعتی تعاون فریم ورک کے تحت چینی صنعتوں کی یہاں منتقلی اور بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری ممکن ہو گی۔

مخدوم خسرو بختیارکی سربراہی میں اجلاس منعقد ہوا جس میں سیکرٹری پلاننگ ظفر حسن، پراجیکٹ ڈائریکٹر سی پیک حسان داؤد کے علاوہ بورڈ آف انوسٹمنٹ، پیٹرولیم ڈوژن، وزارت صنعت و تجارت اور خیبر پختونخوا حکومت کے حکام نے شرکت کی۔

اجلاس میں پاک چین صنعتی تعاون، رشکئی اکنامک زون و پیٹرولیم شعبے میں سرمایہ کاری کا جائزہ لیا گیا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مخدوم خسرو بختیار کا کہنا تھا کہ 8 ویں جے سی سی صنعتی تعاون کو اگلے مرحلے میں لے جانے کیلئے راہ ہموار کرے گی۔

انھوں نے کہا کہ صنعتی زونز میں مقامی وسائل کو مد نظر رکھ کر ترقی دی جائے گی۔ صنعتی زونز میں ایسی سرمایہ کاری کو فروغ دیا جائے جو پاک چین تجارت کا توازن قائم کرنے میں معاون ثابت ہوں۔ رشکئی اقتصادی زون کو خاص صنعتی ترقی کے لیے استعمال کیا جائے، رئیل سٹیٹ بزنس نہ بنے۔

ان کا کہنا تھا کہ رشکئی اقتصادی زون کے لیے وفاقی حکومت تمام ضروریات کی فراہمی یقینی بنائے گی۔ وزارت پیٹرولیم ضرورت کے مطابق گیس فراہمی کیلئے فوری کام شروع کرے۔ بجلی کی فراہمی کیلئےاین ٹی ڈی سی رشکئی زون کو نیشنل گریڈ سے لنک کرنے کیلئے اقدامات کرے۔

وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی نے ہدایت کی کہ رشکئی زون میں ایسی سرمایہ کاری حوصلہ افزائی کی جائے جو پاکستان کی برآمدات میں اضافے کا باعث ہو۔ زون میں مقامی سرمایہ کاروں کو برابر کے مواقع فراہم کیے جائیں۔

احمد علی کیف  1 سال پہلے

متعلقہ خبریں