اسلام آباد ائیرپورٹ سے پاکستانی لڑکیوں کو چین اسمگل کرنے کی کوشش ناکام

اسلام آباد (پبلک نیوز) اسلام آباد ایئرپورٹ پر دو چینی لڑکوں اور تین پاکستانی خواتین کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ گرفتار ہونے والے چینی پاکستان خواتین کو چین لے جا رہے تھے، جہاں ان سے جسم فروشی کا دھندہ کرایا جاتا ہے۔

 

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ایئرپورٹ پر دو چینی لڑکوں اور تین پاکستانی خواتین کو گرفتار کر لیا گیا۔ گرفتار چینی پاکستانی خواتین کو سمگل کرکے چین لے جارہے تھے۔ گرفتار چینی جسم فروشی کے دھندے اور اعضاء کی خریدوفروخت کا مکروہ دھندہ کرتے ہیں۔ گرفتار افراد میں دو چینی لڑکے اور تین پاکستانی لڑکیاں شامل ہیں۔ تمام ملزمان کو ایف آئی اے نے انسداد انسانی سمگلنگ سیل منتقل کردیا ہے۔

متعلقہ خبر: ایف آئی اے نے چینی اور پاکستانی جوڑے کو گرفتار

ایف ائی اے نے لاہور سمیت دیگر علاقوں میں چائنز نوجوانوں کے خلاف کریک ڈاؤن کیا۔ ڈائریکٹر جنرل بشیر میمن کی ہدایت پر ڈائریکٹر زون 2 رستم چوہان نے کارروائیاں کیں۔ ڈپٹی ڈائریکٹر جمیل میو کی سربراہی میں ٹیم نے کارروائی کی۔

 

ایف آئی اے نے ڈیوائن ہومز میں کارروائی کرتے ہوئے 8 چائیز گرفتار کر لیے۔ چینی باشندوں نے پاکستانی ایجنٹوں کے ساتھ مل کر پاکستانی لڑکیوں سے شادی کرتے تھے۔ شادی کے بعد ان لڑکیوں سے جسم فروشی کا دھندہ کرایا جاتا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: شادی کے بعد لڑکیوں سے جسم فروشی کروانے والے 8 چینی گرفتار

واضح رہے کہ گرفتار ملزمان پاکستانی لڑکیوں سے شادی کر کے انسانی سمگلنگ، جسم فروشی اور گردوں کے ٹرانسپلانٹ کے لیے استعمال کرتے تھے۔ چینی باشندے اسلام قبول کرنے کے جعلی سرٹیفکیٹ دکھا کر پاکستانی لڑکیوں سے شادی کرتے تھے۔

حارث افضل  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں