حمزہ شہباز نے خاندان اور پارٹی کے لیے بدنامی کمائی: فیاض الحسن چوہان

لاہور(پبلک نیوز) فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ قانون نافذ کرنے والوں نے فرزند اعلی کو رنگے ہاتھوں رات کو پکڑلیا۔ حمزہ شہباز اپوزیشن کا کردارادا کریں، بھاگنے والوں کا کردار ادا نہ کریں۔ کرپشن، بددیانتی کے چوکے چھکے لگے ہیں تو کہتے ہیں احتساب نہ کرو۔

 

پنجاب اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراطلاعات پنجاب فیاض الحسن چوہان کا کہنا تھا کہ فرزند اعلی حمزہ شہباز سے ہاتھ جوڑ کر کہا کہ اسمبلی آئیں لیکن وہ لندن کی طرف چلے گئے۔ قانون نافذ کرنے والوں نے فرزند اعلی کو رنگے ہاتھوں رات کو پکڑ لیا۔ حمزہ شہباز پتلی گلی سے بھاگے جھکنے اور ڈرنے والے رستم اور بھولو پہلوان دلیر اور جرات مند لوگ چوروں والے ٹائم ڈھائی بجے بھاگنے کے چکر میں تھے۔

وزیراطلاعات پنجاب نے کہا کہ بھاگنے کی کوشش کر کے اپنی بے عزتی کروائی، حمزہ شہباز اپوزیشن کا کردار ادا کریں بھاگنے والوں کا کردار ادا نہ کریں۔ وہ تمام لوگ جنہوں نے ڈیل کی ان سے ڈیل نہیں کریں گے اور نہ ہی پتلی گلی سے بھاگنے دیں گے، جس طرح استقامت کے ساتھ لوٹا ویسا ہی حساب کتاب دے دیں۔ جس نے خزانہ لوٹنے میں شرم نہ دکھائی تو ان پر رحم نہیں آنا چاہیے۔

 

فیاض الحسن چوہان کا کہنا تھا کہ پاکستان واحد ملک ہے جہاں حکمران بے مثال قسم کی لوٹ کھسوٹ کرتے ہیں تو کوئی اپنا نام جمہوریت اور اٹھاویں ترمیم رکھ لیتے ہیں۔ حمٹی ڈمٹی برادران نے 2008ء سے2013ء تک لوگوں سے زبردستی زمینیں چھینی بچہ بچہ جانتا ہے یہ سائیکل پر پھرتے تھے کس طرح پرویز الہی نے ان کی سپورٹ کی۔

 

انہوں نے مزید کہا کہ کرپشن بددیانتی کے چوکے چھکے لگے ہیں تو کہتے ہیں احتساب نہ کرو۔ سعد رفیق سے علیم خان کا کوئی کاروبار نہیں۔ دس سال حکومت رہی اگر کوئی الزام علیم خان پر ہوتا تو نیب ایف آئی اے کیا کر رہی تھی، اگر تحقیقات نہیں کیں تو اس کا مطلب ان کے خلاف کوئی ثبوت نہیں تھے۔ قانون بنانا اور بچے پیدا کرنا آسان کام ہے لیکن قانون پر عمل درآمد اور بچوں کی تربیت کرنا مشکل کام ہے۔ سکیورٹی ادارے ملک لوٹنے والوں پر نظر رکھے ہوئے ہیں۔

 

عطاء سبحانی  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں