وفاق، صوبوں کے درمیان وسائل کی تقسیم پر ورکنگ گروپ قائم

اسلام آباد (پبلک نیوز) وزیر خزانہ اسد عمر کی زیر صدارت این ایف سی کا اجلاس ختم ہو گیا۔ نئے این ایف سی کی تیاری کے لیے چھ ورکنگ گروپ قائم کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا۔

 

وزیرخزانہ اسد عمر کی زیر صدارت این ایف سی کا اجلاس ختم ہوا۔ اجلاس میں نئے این ایف سی کی تیاری کے لیے 6 ورکنگ گروپ قائم کرنے کا فیصلہ کر لیا گیا۔ پہلا ورکنگ گروپ فاٹا کے امور پر سفارشات تیار کرے گا۔ ایز آف ڈوئینگ بزنس کے لیے بھی سفارشات تیار کی جائیں گی۔

 

میکرو اکنامک ایشوز پر بھی ورکنگ گروپ قائم کیا جائے گا۔ وفاق اور صوبوں کے درمیان وسائل کی تقسیم پر بھی ورکنگ گروپ قائم کیا جائے گا۔ آبادی اور رقبے کی بنیاد پر وسائل کی تقسیم کا نیا فارمولہ تیار کیا جائے گا۔ ہر 6 ہفتہ کے بعد این ایف سی اجلاس کا انعقاد ہو گا۔

 

اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کوتے ہوئے وزیر خزانہ اسد عمر کا کہنا تھا کہ وفاق اور صوبوں نے مالیاتی مسائل سے آگاہ کیا، وزیرخزانہ وفاق، صوبوں نے زور دیا کہ مالیاتی وسائل نہیں بڑھے تو مسائل حل نہیں ہوں گے۔ ٹیکس کی کمی کی وجہ سے وفاق، صوبے اہداف حاصل نہیں کر سکیں گے۔ پہلے اجلاس میں چھے ورکنگ گروپس بنا دیئے گئے ہیں۔

حارث افضل  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں