معاشی صورتحال سے متعلق غلط فہمیاں پھیلانے سے گریز کیا جائے: وزیرخزانہ


اسلام آباد(پبلک نیوز) وزیرخزانہ اسد عمر کا کہنا ہے کہ کسی قسم کی ہیجانی کیفیت نہیں، ملک میں جلد بھاری سرمایہ کاری آئے گی، بھارت کے لوگ بھی امن چاہتے ہیں، امید رکھتے ہیں سارک کا تعاون مستقبل میں مضبوط ہو جائے گا۔

 

وزیرخزانہ اسد عمر نے جنوبی ایشیاء اقتصادی سمٹ سے خطاب کر ہوئے کہا کہ کرتار پور بارڈر بہت اچھا اقدام تھا، اس پر پاکستان بھارت سے مثبت جواب کی امید رکھتا ہے اور پاکستان جواب کا منتظر ہے۔ دو ریاستوں کے درمیان کشیدگی اور سیاسی تنازعات حتم کرنے کیلئےالگ سوچنا ہو گا۔ معیشت کے تمام اشارے بہتری کی طرف گامزن ہیں اور کسی قسم کی ہیجانی کیفیت نہیں۔

 

وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ سارک جنوبی ایشیاء کا مستقبل مضبوط کرے گا، کانفرنس میں بھارت کا شرکت نہ کرنا افسوس ناک ہے۔ دونوں ممالک کو آؤٹ آف باکس حل سوچنا پڑے گا۔ ایکسچینج ریٹ کا فیصلہ اسٹیٹ بینک نے کیا تھا اور بینک یہ فیصلہ جاری رکھے گا۔ ڈالر کی قیمت کا حتمی فیصلہ اسٹیٹ بینک کرتا ہے، البتہ ضرورت پڑی تو اسٹیٹ بینک کا طریقہ کار مضبوط کیا جائے گا۔

 

پی ٹی آئی کی پالیسی میں کوئی تبدیلی نہیں، اسٹیٹ بینک غیر جانبدار اور خود مختار رہے گا، اسٹیٹ بینک اور وزارت خزانہ کے درمیان رابطے کا میکنزم بنایا جا رہا ہے۔ گورنر، اسٹیٹ بینک اور وزارت خزانہ کوئی میکنزم پیش کریں۔ فنانس بحران ہو گیا اور گیپ پورا کرلیا ہے۔ ابھی صرف سمت نظر آئی ہے اور بہت کام کرنے کی ضرورت ہے۔

 

وزیرخزانہ اسد عمر نے مزید کہا کہ ابھی بنیادی کام کر رہے ہیں، ملک مالی خسارے کا متحمل نہیں ہو سکتا، پہلے بھی اقدامات کیے اب بھی کریں گے۔ برآمدات بڑھ رہی ہیں اور خسارے کم ہو رہے ہیں، کسی قسم کی ہیجانی کیفیت نہیں، ملک میں جلد بھاری سرمایہ کاری آئے گی، معیشت کے تمام اشارے بہتری کی طرف گامزن ہیں، لہٰذا معاشی صورتحال سےمتعلق غلط فہمیاں پھیلانے سے گریز کیا جائے ۔

 

 

عطاء سبحانی  9 ماه پہلے

متعلقہ خبریں