پہلے بھی کہا، آج بھی کہتا ہوں آئی ایم ایف کے پیچھے نہیں چھپیں گے: وفاقی وزیر خزانہ

اسلام آباد (پبلک نیوز) وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا ہے کہ محنت کے ساتھ نیت ٹھیک ہو تو کامیابی اللہ دیتا ہے۔ مشکل وکٹ پر بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔ آئی ایم ایف کے ساتھ سخت فیصلے بھی ہوئے تو عوام کو بتائیں گے۔

 100روزہ کارکردگی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہان تھا کہ میری تقریر کے 3 حصے ہیں۔ پہلا حصہ ہمیں ملا کیا، دوسرا کیا کیا اور تیسرا جانا کہاں ہے۔ محنت کے ساتھ نیت ٹھیک ہو تو کامیابی اللہ دیتا ہے۔ تحریک انصاف کا منشور ہر حال میں کامیاب ہوگا۔ تحریک انصاف کی حکومت سے پہلے قرض بڑھا کر زرمبادلہ کم کیا گیا۔ جب حکومت ملی تو بجٹ خسارہ 2300 ارب روپے تھا۔

مشکل وکٹ پر بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔ گزشتہ حکومت نے اسٹیل ملز ملازمین کی بیواؤں کا پیسہ کھایا۔ پہلے بھی کہا، آج بھی کہتا ہوں آئی ایم ایف کے پیچھے نہیں چھپیں گے۔ آئی ایم ایف سے معاہدہ اپنی شرائط پر کریں گے۔ آئی ایم ایف کے ساتھ سخت فیصلے بھی ہوئے تو عوام کو بتائیں گے۔ وزیراعظم کو بیرونی دوروں کے لیے میں نے قائل کیا۔ وزیراعظم نے سب سے زیادہ غریبوں کے بارے میں پوچھا۔

سادگی اور کفایت شعاری مہم سے بدلنے والی سوچ کا ضرور اثر پڑے گا۔ قوم کی بہتری کے لیے وزیراعظم یوٹرن لینے کو تیار ہیں۔ ٹیکس صرف امیروں پر لگائے گئے، غریبوں کو بچایا گیا۔ صحت کارڈ پروگرام ملک بھر میں پھیلایا جائے گا۔ غریب اور کمزور طبقے کو اپنے پاؤں پر کھڑا کریں گے۔

حارث افضل  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں