ن لیگ من پسند احتساب چاہتی ہے، فردوس عاشق اعوان

پبلک نیوز: شہباز کی رہائش گاہ پر ان کی گرفتاری کے لیے نیب ٹیم نے آج پھر چھاپہ مارا، مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ لاہور ہائی کورٹ کے فیصلے کی موجودگی میں حمزی شہباز کی گرفتاری غیر قانونی ہے، جس پر فردوس عاشق اعوان اور فیاض الحسن چوہان نے کہا ہے کہ نیب کو یہ حق حاصل ہے کہ جس شخص کے خلاف تحقیقات چل رہی ہوں اس کو جب چاہے گرفتار کیا جا سکتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق حمزہ شہباز کو گرفتار کرنے کے لیے نیب ٹیم نے چھاپہ مارا تو اس حوالے سے مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ حمزہ شہباز کی گرفتاری غیر قانونی ہے اور اگر کوئی قانونی عمل بھی ہو تو دھاوا نہیں بولا جاتا حمزہ شہباز کوئی دہشت گرد نہیں۔

حمزہ شہباز کے وکیل کا کہنا ہے کہ نیب نے ایک بار پھر بغیر اطلاع کے چھاپہ مارا ہے۔ سپریم کورٹ کے حکم امتناعی تک گرفتاری عمل میں نہیں لائی جا سکتی ہے۔

اسی حوالے سے فیاض الحسن چاہان کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ ہے کہ نیب آرڈیننس کے مطابق نیب جس شخص کے خلاف تحقیقات کر رہا ہو اس کو بغیر بتائے گرفتار کر سکتا ہے۔ انھوں نے مزید کہا کہ حمزہ شہباز ریاست کے اندر ریاست بنانا چاہتے ہیں۔

مریم اورنگزیب کے بیان پر رد عمل میں فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ ن لیگ من پسند احتساب چاہتی ہے۔ وہ چاہتے ہیں کہ ادارے ابھی بھی ان کے ما تحت ہوں لیکن اب ایسا نہیں ہو گا۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں